Tuesday , October 23 2018
Home / Top Stories / شہر میں پہلے ماڈرن اے سی بس شیلٹر کا افتتاح

شہر میں پہلے ماڈرن اے سی بس شیلٹر کا افتتاح

متعدد عصری سہولیات ،بے بی فیڈنگ روم بھی دستیاب، مستقبل میں الیکٹریکل بسیں چلیں گی: کے ٹی آر

حیدرآباد 22 مئی (سیاست نیوز) ریاستی وزیر بلدی نظم و نسق کے ٹی آر نے آج شہر میں پہلے ماڈرن اے سی بس شیلٹر کا افتتاح کیا جس میں ’’بے بی فیڈنگ روم‘‘ (بچوں کو دودھ پلانے کے لئے علیحدہ روم)، وائی فائی، سی سی ٹی وی، ٹیلی ویژن، موبائیل چارجنگ پوائنٹس، اے ٹی ایم، کافی مشین، بیت الخلاء وغیرہ کی تمام سہولتیں دستیاب ہیں۔ اس طرح کی سہولتیں عوام کو ایرپورٹس یا میٹرو اسٹیشن پر ہی دستیاب ہوا کرتی تھیں۔ اب حیدرآباد کے بس اسٹاپس میں بھی ایسی سہولتیں متعارف کرائی جارہی ہیں۔ شہر حیدرآباد کو عظیم تر حیدرآباد میں تبدیل کرنے کے لئے گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن نے عصری سہولتوں سے لیس بس شیلٹر قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ پبلک پرائیوٹ پارٹنرشپ معاہدہ کے تحت شلپارامم میں قائم کئے گئے اس بس شیلٹر کا وزیر بلدی نظم و نسق نے افتتاح کیا۔ اس موقع پر وزیر ٹرانسپورٹ مہیندر ریڈی، میئر حیدرآباد بی رام موہن، مقامی رکن اسمبلی اے گاندھی، کمشنر بلدیہ جناردھن ریڈی کے علاوہ دوسرے قائدین اور عہدیدار موجود تھے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے وزیر ٹرانسپورٹ مہندر ریڈی نے کہاکہ عوامی ٹرانسپورٹ کو مزید مستحکم بنانے کے لئے اس طرح کے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ 30 لاکھ روپئے کے مصارف سے یہ ماڈرن بس شیلٹر قائم کیا گیا ہے۔ انھوں نے کہاکہ چیف منسٹر کے سی آر عوامی ٹرانسپورٹ پر خصوصی توجہ دے رہے ہیں۔ 1400 کروڑ روپئے کے مصارف سے نئی بسیں خریدی جارہی ہیں۔ ریاست میں 66 کروڑ روپئے کے مصارف سے بس اسٹانڈس کو عصری سہولتوں سے لیس کیا جارہا ہے۔ گریٹر حیدرآباد کے حدود میں 826 بس شیلٹرس (پی پی پی) کے تحت عصری تقاضوں سے لیس کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ 430 نئے بس شیلٹرس تعمیر کئے جارہے ہیں۔ 396 قدیم بس شیلٹرس کو عصری تقاضوں سے لیس کیا جارہا ہے۔ شلپارامم تا شمس آباد تک 8 اے سی سرویس چلائی جارہی ہیں۔ مستقبل میں 500 الیکٹریکل بسیں چلانے کا بھی اعلان کیا۔ اس کے علاوہ ریاستی وزیر بلدی نظم و نسق کے ٹی آر نے مختلف مقامات پر ذخیرہ آب کا افتتاح کرتے ہوئے کہاکہ حکومت شہر حیدرآباد میں پانی کی قلت پر قابو پانے اور عوام کو 24 گھنٹے پانی سربراہ کرنے کے لئے بڑے پیمانے پر اقدامات کررہی ہے۔ انھوں نے ایپا سوسائٹی کے قریب 6.8 کروڑ روپئے کے مصارف سے تعمیر کردہ (ریزروائر) ذخیرہ آب کا افتتاح کیا۔ ساتھ ہی اسمبلی حلقہ شیرلنگم پلی کے ڈوینس کالونی میں 12.10 کروڑ روپئے کے مصارف سے تعمیر کردہ ذخیرہ آب، گولڈن ٹولپ کے قریب 4.68 کروڑ روپئے کے مصارف سے تعمیر کردہ ذخیرہ آب حیدر نگر اور حڈا پارک کے قریب تعمیر کردہ ذخیرہ آب کا بھی افتتاح کیا۔

TOPPOPULARRECENT