Tuesday , August 14 2018
Home / شہر کی خبریں / شہر میں کچرے کی بروقت عدم نکاسی سے بدبو و تعفن

شہر میں کچرے کی بروقت عدم نکاسی سے بدبو و تعفن

بلدی عملہ لاپرواہ ، عوام کے لیے تکلیف کا باعث ، بلدیہ کمشنر کو توجہ دینے کی ضرورت

بلدی عملہ لاپرواہ ، عوام کے لیے تکلیف کا باعث ، بلدیہ کمشنر کو توجہ دینے کی ضرورت
حیدرآباد۔ 6 جولائی (سیاست نیوز) دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد میں کچرے کی نکاسی کے نامناسب انتظامات سے عوام کو سخت تکالیف کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ پرانے شہر کے بیشتر علاقوں میں دو تا تین یوم کچرے کی نکاسی عمل میں نہ لائے جانے کے سبب بدبو و تعفن کی صورتحال پیدا ہورہی ہے۔ شہر کے بیشتر مقامات پر بلدی عملہ کی جانب سے اختیار کردہ لاپرواہ رویہ کے سبب ان علاقوں میں شدید تکلیف دیکھی جارہی ہے جہاں مساجد کے قریب کچرے کی کنڈیاں موجود ہیں۔ کچرے کی کنڈیوں کی روزانہ عدم تبدیلی اور رہائشی علاقوں سے عدم نکاسی کے باعث حالات انتہائی ابتر ہوتے جارہے ہیں، اس کے باوجود پرانے شہر کے بیشتر محلہ جات میں روزانہ صفائی کے انتظام کو یقینی بنائے جانے سے گریز کیا جارہا ہے جس سے عوام میں ناراضگی پائی جاتی ہے۔ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے صفائی کنٹراکٹرس عموماً رات کے اوقات میں کچرے کی صفائی کا کام انجام دیتے ہیں اور ماہ رمضان کے دوران سحر تک مسلسل چہل پہل برقرار رہنے کے سبب یہ سرگرمیاں کچھ حد تک کیلئے مفلوج ہوجاتی ہیں، لیکن علی الصبح یہ سرگرمیاں انجام دی جاسکتی ہیں، اس کے باوجود بھی بیشتر کنٹراکٹرس ان سرگرمیوں کو خاطر خواہ اہمیت نہ دیتے ہوئے کچرے کی نکاسی پر توجہ مبذول نہیں کرتے جس کے نتیجہ میں کئی دنوں تک کچرا پڑا رہنا معمول بنتا جارہا ہے۔ اس صورتِ حال سے نمٹنے کیلئے یہ ضروری ہے کہ جی ایچ ایم سی کے اعلیٰ عہدیداران فوری حرکت میں آتے ہوئے کنٹراکٹرس کو اس بات کا پابند بنائیں کہ وہ کچرے کی روزانہ نکاسی کے ذریعہ محلہ جات میں صاف صفائی کو یقینی بنائیں اور مساجد کے قریب روزانہ جاروب کش عملہ کے ذریعہ صفائی اور کچرے کی نکاسی کو لازمی بنایا جائے تاکہ مصلیوں کو کسی قسم کی تکلیف نہ ہو۔

TOPPOPULARRECENT