Sunday , June 24 2018
Home / شہر کی خبریں / شہر میں 18 جنوری کو پولیو ڈراپس مہم

شہر میں 18 جنوری کو پولیو ڈراپس مہم

حیدرآباد ۔ 13 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز ) : ملک کو پولیو سے پاک بنانے کی مہم کے پیش نظر حکومت کے فیصلہ کے مطابق 18 جنوری 2015 کو 0-5 سال کے بچوں کو پولیو ڈراپس ڈالے جائیں گے ۔ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد نے 18 جنوری کو منعقد ہونے والے اس پروگرام کے سلسلہ میں تیاریوں کو قطعیت دیدی ہے اور اس بات کا فیصلہ کیا ہے کہ شہر میں جملہ 3200 مراکز پر پولیو ڈراپس پلائے جائیں گے ۔ 18 جنوری کو صبح 7 بجے تا شام 6 بجے کے دوران ریکارڈس کے مطابق 5 لاکھ 83 ہزار 567 بچوں کو ڈراپس ڈالے جائیں گے اور 19 جنوری تا 21 جنوری گھر گھر پولیو ڈراپس ڈالنے کی مہم چلائی جائے گی تاکہ جن بچو کو 18 جنوری کو پولیو ڈراپس نہیں پلائے جاسکے ان بچوں کا احاطہ کیا جاسکے ۔ کمشنر و اسپیشل آفیسر مجلس بلدیہ عظیم ترحیدرآباد مسٹر سومیش کمار نے اس سلسلہ میں آج جائزہ اجلاس منعقد کرتے ہوئے اپنے ماتحت عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وہ انسداد پولیو کی اس مہم میں حصہ لیں اور عوام کو راغب کروانے میں کوئی کسر باقی نہ رکھیں ۔ 18 جنوری کو انسداد پولیو ڈراپس ڈالنے کے عمل میں جملہ 12 ہزار 800 ملازمین حصہ لیں گے جو کہ حیدرآباد و سکندرآباد کے علاقوں میں قائم کئے جانے والے 3200 پولیو مراکز پر دوا ڈالنے کے لیے متعین رہیں گے ۔ علاوہ ازیں شہر کے سلم علاقوں میں بھی بلدیہ کی جانب سے خصوصی توجہ دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے تاکہ سلم علاقوں میں موجود بچوں کو پولیو سے محفوظ رکھنے کے اقدامات کئے جاسکیں ۔ جی ایچ ایم سی نے دونوں شہروں میں 101 ایسے مقامات کی نشاندہی کی ہے جہاں پولیو کے سب سے زیادہ خطرات ہیں اور بلدیہ ان علاقوں پر توجہ مبذول کرے گی ۔ کمشنر و اسپیشل آفیسر مسٹر سومیش کمار کے بموجب ان ٹیموں کے علاوہ مزید 85 ٹیمیں تیار کی گئی ہیں جو کہ مسلسل گشت کرتی رہیں گی تاکہ زیر تعمیر عمارتوں میں کام انجام دے رہے مزدوروں ، خانہ بدوشوں ، گداگروں کے علاوہ دیگر بچوں کو پولیو ڈراپس ڈالے جاسکیں ۔ علاوہ ازیں بلدیہ نے مذہبی مقامات پر بھی پولیو ڈراپس ڈالنے کا عارضی اہتمام کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ اس جائزہ اجلاس میں مسٹر این روی کرن ایڈیشنل کمشنر بلدیہ کے علاوہ رنگاریڈی و حیدرآباد ضلع کلکٹریٹ کے عہدیدار موجود تھے ۔۔

TOPPOPULARRECENT