Friday , April 20 2018
Home / شہر کی خبریں / شہر کی ٹریفک پر قابو پانے فلائی اوور بریجس و اسٹیل برج

شہر کی ٹریفک پر قابو پانے فلائی اوور بریجس و اسٹیل برج

حیدرآباد ۔ 19 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز ) : گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن نے پرانے شہر میں بے ہنگم ٹریفک مسائل کی یکسوئی کے لیے 3 فلائی اوورس تعمیر کرنے کی تجویز تیار کی ہے ۔ جس میں کنچن باغ تا نلگنڈہ کراس روڈ تک 2 کیلو میٹر اسٹیل برج بھی شامل ہے ۔ زو پارک تا آرام گھر تک ایک فلائی اوور بھی تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ کنچن باغ تا نلگنڈہ چوراہا تھا اسٹیل برج تعمیر کرنے کے لیے جو بھی رکاوٹیں تھی وہ سب دور ہوگئی ہیں ۔ گریٹر حیدرآباد کے حدود میں سڑکوں ، فلائی اوورس کی تعمیرات کو یقینی بنانے کے لیے ایس آر ڈی پی پلان تیار کیا گیا ہے جس پر 21 ہزار کروڑ روپئے خرچ کئے جارہے ہیں ۔ جس میں انڈر پاس کی تعمیرات بھی شامل ہیں ۔ کنچن باغ چوراہا اویسی ہاسپٹل جنکشن سے ایل بی نگر جانے کے راستے میں ایک کیلو میٹر طویل 4 لائن فلائی اوور تعمیر کرنے کی تجویز تیار کی گئی ہے جس پر 63 کروڑ روپئے خرچ کرنے کا منصوبہ تیار کیا گیا ہے ۔ اس میں حصول اراضیات کا معاوضہ شامل نہیں ہے ۔ اس فلائی اوور کی تعمیر کیلئے ٹنڈر بھی تیار کرلیا گیا تھا تاہم اس وقت کے عوامی منتخب نمائندوں کے اعتراضات کے بعد تعمیری کاموں کا آغاز نہیں ہوپایا تھا ۔ اس پلان میں معمولی تبدیلی کے بعد فلائی اوور کے تعمیر کی منظوری دی گئی ۔ بہت جلد تعمیری کاموں کا آغاز ہونے کا امکان ہے ۔ کنچن باغ اویسی ہاسپٹل جنکشن تا نلگنڈہ کراس روڈ تک تقریبا 2 کیلو میٹر اسٹیل برج تعمیر کرنے کی تجویز تیار کی گئی ہے ۔ اس کی منظوری کا انتظار ہے ۔ اس 4 لاکھ فلائی اوور کی تعمیر کیلئے حصول اراضیات پر 523 کروڑ روپئے خرچ ہونے کا امکان ہے ۔ اس فلائی اوور کی تعمیر سے سنتوش نگر ، آئی ایس سدن ، مادنا پیٹ ، سعید آباد ، چنچل گوڑہ کے علاوہ دوسرے علاقوں کے ٹریفک مسائل حل ہوجائیں گے ۔ زو پارک تا آرام گھر تک تقریبا 3.78 کیلو میٹر 6 لائن فلائی اوور تعمیر کرنے کی تجویز تیار کی گئی ہے ۔ اس فلائی اوور کی تعمیر پر 636.8 کروڑ روپئے خرچ ہونے کا تخمینہ تیار کیا گیا ہے ۔ یہ فلائی اوور پری کاسٹنگ ٹکنالوجی سے تعمیر کرنے کا منصوبہ ہے ۔ اس فلائی اوور کی تعمیر سے حسن نگر ، نیشنل پولیس اکیڈیمی ، زو پارک کے علاوہ دوسرے علاقوں میں ٹریفک مسائل بڑی حد تک حل ہوجائیں گے ۔ پرانے شہر کے زیادہ ٹریفک بہاؤ والے علاقوں میں چندرائن گٹہ ، دبیر پورہ اور شیخ پیٹ برج ہی تعمیر کیے گئے ہیں ۔ حکومت تلنگانہ کی ہدایت پر جی ایچ ایم سی نے پرانے شہر میں ان تین فلائی اوورس تعمیر کرنے کی تجویز تیار کی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT