Tuesday , December 12 2017
Home / Top Stories / شہر کے مختلف علاقوں میں شام کے وقت اچانک تیز بارش

شہر کے مختلف علاقوں میں شام کے وقت اچانک تیز بارش

کئی مقامات جھیل میں تبدیل ‘ برقی سربراہی میں خلل ۔ محکمہ موسمیات کی جانب سے مزید بارش کی پیش قیاسی
حیدرآباد۔9اکٹوبر(سیاست نیوز) شہر میں شام کے اوقات میں اچانک بارش نے شہرکے مختلف علاقو ںکو جل تھل کردیا اور گلیاں اور محلہ جات جھیل میں تبدیل ہوگئیں ۔ مختلف علاقوں میں مختلف اوقات میں وقفہ وقفہ سے ہوئی بارش کے سبب شہریوںکو ہی نہیں بلکہ بلدیہ حیدرآباد کے عہدیداروں اور عملہ کو بھی مسائل کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ شہر کے کئی علاقوں میں شدید بارش سے صورتحال انتہائی سنگین ہوگئی اور مئیر حیدرآباد رام موہن جی ایچ ایم سی کے دفتر میں موجود کنٹرول روم پہنچ گئے اور موسم کی صورتحال کا جائزہ لینے کے بعد عوام سے اپیل کی کہ محکمہ موسمیات کے انتباہ کو دیکھتے ہوئے وہ مکانوں سے بلاضرورت نہ نکلیں ۔ مادھاپور کے علاقہ میں 8تا9بجے شب ایک گھنٹہ کے دوران 61.5ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی جو اب تک کی تیز رفتار بارش تصور کی جا رہی ہے ۔ گذشتہ یوم پرانے شہر کے علاقوں میں شدید بارش ریکارڈ کی گئی تھی لیکن آج نئے شہر کے علاقو ں میں شدید بارش ہوئی ۔ رات 10بجے تک کی تفصیلات کے مطابق رامچندر پورم میں سب سے زیادہ 83.3ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی جبکہ مادھاپور میں 67.0ملی میٹر ‘ ترملگیری میں 47.8ملی میٹر ‘ راجندر نگر میں 39.3 ملی میٹر ‘ ملکا جگری میں 41.3ملی میٹر ‘ گولکنڈہ میں 37.3ملی میٹر ‘ جوبلی ہلز میں 35.3ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی جو معمول کی بارش سے زیادہ ہے۔ محکمہ موسمیات نے آئندہ 24
گھنٹوں کے دوران شدید بارش کی پیش قیاسی کی اور کہا کہ شہر کے علاوہ ریاست کے دیگر اضلاع میں خلیج بنگال میں موجود طوفان کے اثرات نظر آئیں گے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق کئی علاقوں میں بادل برس رہے ہیں اور بعض علاقوں سے بادل گذرتے ہوئے برس جاتے ہیں جس سے مختلف علاقوں میں مختلف وقت بارش ہورہی ہے ۔ بلدیہ نے رات 8بجے شروع ہوئی اچانک بارش کے فوری بعد ایمرجنسی عملہ کو متحرک کردیا اور جن علاقوں سے پانی جمع ہونے کی شکایات موصول ہوئی ان سے پانی کی نکاسی کے انتظامات کئے ۔ مصروف سڑکوں پر بلدیہ کے ایمرجنسی اسکواڈ کو متعین رکھا گیا تھا جس کے سبب کئی اہم سڑکوں پر پانی جمع ہونے کی شکایات موصول نہیں ہوئی لیکن یوسف گوڑہ‘ رحمت نگر‘ وینکٹ گری نگر کے علاوہ اطراف میں دکانوں و مکانوں میں پانی داخل ہوگیا ۔ کچھ علاقوں سے گاڑیاں بہہ جانے کی شکایات ملیں۔ کمشنر بلدیہ نے عملہ کو رات بھر چوکس رہنے کے علاوہ ایمرجنسی خدمات کی فراہمی میں کوئی کوتاہی نہ کرنے ہدایت دی ۔بارش شروع ہوتے ہی کئی علاقوں میں تاریکی چھا گئی اور 2گھنٹے سے زیادہ برقی سربراہی منقطع رہی جس سے ایمرجنسی عملہ کو دشواریاں پیش آرہی تھیں۔ بارش کے دوران اسٹریٹ لائٹس کے بند ہونے سے راہروؤں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT