Tuesday , February 20 2018
Home / ہندوستان / شیعہ وقف بورڈ کمیونٹی کا نمائندہ نہیں

شیعہ وقف بورڈ کمیونٹی کا نمائندہ نہیں

صرف سپریم کورٹ کے فیصلے قابل قبول : تنظیم علی کانگریس
لکھنؤ، 22 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش شیعہ وقف بورڈ کے بابری مسجد تنازعہ میں میں سر گرم ہونے کے بعد شیعہ برادری میں اسکی مخالفت تلخ ہوگئی ہے۔ آج یہاں تنظیم علی کانگریس نے واضح طور پر کہا ان کی برادری بابری مسجد ۔ رام جنم بھومی تنازعہ میں صرف سپریم کورٹ کا فیصلہ ہی قبول کرے گی۔ تنظیم علی کانگریس کی جانب سے بولتے ہوئے روبینہ جاوید مرتضیٰ نے عوام سے اپیل کی وہ اس معاملے پر کورٹ کے فیصلے کو کھلے دل سے خیر مقدم کریں۔ انہوں نے ہندستان کے تمام عوام سے درخواست کرتے ہوئے کہا کیہ سپریم کورٹ کے فیصلے کو شکست یا فتح کے طور پر نا لیں۔ محترمہ روبینہ نے کہا کہ شیعہ سینٹرل وقف بورڈ ، ہندستان یا پردیش کے شیعہ برادری نمائندہ نہیں ہے ، انہوں نے کہا اس کا بابری مسجد پر کوئی حق نہیں ہے ۔ تنظیم کے جنرل سکریٹری اصغر مہدی نے کہا کہ شیعہ وقف بورڈ کا دعویٰ پہلے ہی خارج کیا جا چکا ہے ، انہوں نے بتایا کہ بابری مسجد بابر کے حکم پر تعمیر کی گئی تھی اور وہ سنی تھا۔مسٹر مہدی نے الزام لگایا کہ اس مسئلہ پر عوم کا استحصال کیا گیا ، اور سیاسی فائدہ اٹھایا گیا ہے ۔

کمیونسٹ رہنما سکومل سین کا انتقال
نئی دہلی، نومبر 22 (سیاست ڈاٹ کام) بائیں بازو کے بزرگ رہنما اور راجیہ سبھا کے سابق سکومل سین کا آج کولکتہ میں انتقال ہوگیا ۔ وہ 83 سال کے تھے ۔ مسٹر سین کے خاندان میں اس کی بیوی کے علاوہ دو بیٹے ہیں۔ انہیں کل ہسپتال میں داخل کیا گیا تھا، جہاں انہوں نے صبح 10 بجے آخری سانس لی۔ مارکسی کمیونست پارٹی نے ان کی موت پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT