Tuesday , July 17 2018
Home / ہندوستان / شیوسینا کو سرحدپار فائرنگ سے فوجیوں کی ہلاکت پر تشویش

شیوسینا کو سرحدپار فائرنگ سے فوجیوں کی ہلاکت پر تشویش

ممبئی ۔ 17جنوری۔( سیاست ڈاٹ کام ) سرحدپار فائرنگ کے واقعات میں فوجیوں کی ہلاکت پر اظہارتشویش کرتے ہوئے شیوسینا نے آج اظہارِ حیرت کیا کہ آخر کتنے دن پاکستانی فوجیوں اور دہشت گردوں کے حملے کو ہمارا ملک برداشت کرتا رہے گا ؟ سربراہِ فوج جنرل وپن راوت کے اس انتباہ کی بھی ستائش کی گئی جنھوں نے کہا تھا کہ پاکستان کے تائید یافتہ دہشت گردوں کے خلاف زیادہ سخت کارروائی کی جائے گی ۔ انھوں نے کہا کہ فوج ہند دشمن سرگرمیوں کو جموںو کشمیر میں کامیاب ہونے نہیں دے گی ۔ شیوسینا نے دعویٰ کیا کہ کسی جنگ کے بغیر تقریباً 1600 ارکان عملہ سرحدپار فائرنگ میں گزشتہ 13 سال کے دوران ہلاک ہوچکے ہیں اور یہ ایک سنگین معاملہ ہے ۔ 7 پاکستانی فوجی ہندوستانی فوج کی کارروائی میں ہلاک ہوگئے ، جبکہ اس نے جموں و کشمیر میں جنگ بندی کی خلاف ورزی پر اور دراندازی کی کوشش کو ناکام بنانے کیلئے پاکستانی تنظیم جیش محمد کے خلاف کارروائی کی تھی ۔ شیوسینا نے کہاکہ حالانکہ ہندوستانی فوج یومِ فوج کے دن شورش پسندی میں ہلاک کئے گئے لیکن تیسرے دن یہ بات واضح ہوگئی کہ یہ فوجی سرحدپار فائرنگ میں ہلاک ہوئے تھے ۔ چنانچہ حقیقی سوال یہ ہے کہ کتنی مدت تک ہندوستان پاکستان کی کارستانیوں کو برداشت کرتا رہے گا ؟ شیوسینا کے ترجمان سامنا کے اداریہ میں حکومت سے یہ سوال کیا گیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT