Friday , November 24 2017
Home / Top Stories / ’ صاحب ! 10 ہزار کروڑ روپئے میرے نہیں بلکہ چندرائن گٹہ بابا کے ہیں ‘

’ صاحب ! 10 ہزار کروڑ روپئے میرے نہیں بلکہ چندرائن گٹہ بابا کے ہیں ‘

لکشمن راؤ کا پولیس اور آئی ٹی تحقیقاتی ٹیم کے روبرو بیان ؟ تحقیقات جاری

حیدرآباد ۔ 8 ۔ دسمبر : ( سیاست نیوز ) : صاحب ! یہ 10 ہزار کروڑ روپئے میرے نہیں بلکہ ’ چندرائن گٹہ کے بابا ‘ کے ہیں ! بی لکشمن راؤ جس نے 10 ہزار کروڑ روپئے کے غیر محسوب بلیک منی رکھنے کا دعویٰ کیا تھا ۔ بتایا جاتا ہے کہ پولیس اور آئی ٹی کی تحقیقاتی ٹیم کے روبرو کسی چندرائن گٹہ کے بابا کا نام لیا ہے ۔  پولیس گہرائی میں پہونچکر تحقیقات کررہی ہے ۔ بابا کی گرفتاری کے بعد ہی حقائق پر سے پردہ اٹھے گا کہ یہ ساری دولت اس کی ہے یا کسی گروپ کی ہے ۔ غیر محسوب اثاثہ جات کا رضاکارانہ طور پر انکشاف کرنے والے گجرات کے مہیش شاہ کے بعد حیدرآباد کے بی لکشمن راؤ سارے ملک میں موضوع بحث بنے ہوئے ہیں ۔ انکم ٹیکس عہدیداروں نے دو تین دن تک لکشمن راؤ کے گھر اور دیگر مقامات پر دھاوا کرتے ہوئے ان کی آمدنی اور اثاثہ جات کی تحقیقات کی ہے اور کئی ڈاکومنٹس کو اپنی تحویل میں لے لیاہے ۔ تحقیقات میں یہ بات منظر عام پر آئی کہ بی لکشمن راؤ کی سالانہ آمدنی 10 لاکھ سے کم اور اندرون 12 یوم نقلی اسنادات کا استعمال کرتے ہوئے اس کو چار کمپنیوں کا ڈائرکٹر بنادیا گیا تھا ۔ انکم ٹیکس کی تحقیقات میں بی لکشمن راؤ نے لمحہ آخر تک انکشاف کردہ دولت کو اپنی ہی دولت قرار دے رہا تھا تاہم انکم ٹیکس اور پولیس نے جب اپنے ڈھنگ سے تحقیقات کیا تو وہ حقائق کو تسلیم کرلیا کہ وہ اس کی دولت نہیں ہے بلکہ یہ 10 ہزار کروڑ روپئے کی غیر محسوب دولت اسمبلی حلقہ چندرائن گٹہ سے تعلق رکھنے والے بارکس بابا کی ہے ۔ انکم ٹیکس اور پولیس کو بابا مطلوب ہے  اور اس کو اپنی تحویل میں لینے کے لیے کئی ٹیمیں تشکیل دیتے ہوئے تلاشی مہم کا آغاز کردیا ہے ۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ یہ بابا نے حوالہ کے کاروبار سے خطیر رقم بیرون ملک روانہ کی ہے اور یہ سالوں سال سے چل رہا ہے ۔ عملی سیاست سے تعلق رکھنے والے اور اثر رسوخ رکھنے والے بابا کے کئی دوست بھی ہیں جو کہ ایک گروپ کی طرح کام کرتے ہیں ۔  غیر محسوب دولت کا انکشاف کرنے والوں پر آر بی آئی اور مرکزی وزیر فینانس خصوصی نظر رکھی ہوئی ہے اور اس کیس کا جہاں پولیس اور محکمہ انکم ٹیکس جائزہ لے رہی ہے ۔ حقائق کی تہہ تک پہونچنے کے لیے سی بی آئی کو بھی شامل کرنے پر غور کررہی ہے ۔ بی لکشمن راؤ کی جانب سے انکم ٹیکس اور پولیس کے سامنے حقائق پیش کرنے کے بعد اس کے ذریعہ اپنی بلیک منی کو وائیٹ کرنے والوں کی نیندیں اڑ گئی ہیں ۔ اب تک اپنی غیر محسوب دولت کو بچانے کی کوشش کرنے والے اب خود کے بچاو کی فکر میں چھپ چھپ کر پھر رہے ہیں کیوں کہ یہ دولت انہیں جیل کے سلاخوں کے پیچھے بھی پہونچا سکتی ہے ۔ بی لکشمن راؤ کے علاوہ ان کے چارٹرڈ اکاونٹننٹ لکشمی نارائنا بھی تفتیش کے دوران کئی حقائق پر سے پردہ اٹھایا ہے جو پولیس اور انکم ٹیکس عہدیداروں کو تحقیقات میں بے حد مفید ثابت ہورہی ہے ۔ دونوں کے گواہوں اور انکشافات کے بعد پولیس اور انکم ٹیکس کے عہدیداروں نے اپنی تحقیقات اور تلاشی مہم تیزی پیدا کردی ہے ۔ ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ پولیس بابا کو بہت جلد گرفتار کرتے ہوئے سارے واقعہ کو منظر عام پر لانے میں مصروف ہوگئی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT