Saturday , November 17 2018
Home / Top Stories / صاف و شفاف انتخابات کے لیے رائے دہندوں میں شعور بیداری ضروری

صاف و شفاف انتخابات کے لیے رائے دہندوں میں شعور بیداری ضروری

تلنگانہ الیکشن واچ کی گول میز کانفرنس ، چیف الیکشن آفیسر رجت کمار کا خطاب
حیدرآباد۔یکم نومبر(سیاست نیوز) چیف الیکشن آفیسر مسٹر رجت کمار نے کہاکہ ریاستی الیکشن کمیشن ایک ایمپائر کی طرح کام کرنے والا ادارہ ہے ‘ انتخابی دھاندلیوں ‘ رائے دہی کے متعلق شعور بیداری ‘ صاف او ر شفاف انتخابات کے انعقاد کے لئے رائے دہندوں میںشعور ضروری ہے۔انہوں نے مزیدکہاکہ امیدواروں کی جوابدہی کو یقینی بنانے اور رائے دہی کے متعلق شعور بیداری کے لئے عوامی سطح پر مہم وقت کی اہم ضرورت ہے۔ وہ آج یہاں حیدرآباد پریس کلب سوماجی گوڑہ میں تلنگانہ الیکشن واچ کے ذریعہ اہتمام منعقدہ گول میز کانفرنس سے خطاب کررہے تھے ۔ سابق ہوم سکریٹری پدم بھوشن ایوارڈ یافتہ مسٹر پدما نابھیا‘ریٹائرڈ آئی اے ایس وسابق اسپیشل چیف سکریٹری مسٹر گوپال رائو‘ مسٹر پدمانابھا ریڈی‘ مسٹر چلکانی او ردیگر نے بھی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے صاف او رشفاف الیکشن اور رائے دہی کے تناسب میںاضافے کے لئے عوامی شعور بیداری مہم کی حمایت کی۔مسٹر رجت کمار نے کہا کہ عام لوگوں کے اندر الیکشن کمیشن کے متعلق غلط رائے او رتاثر پایا جاتا ہے مگر حقیقت یہ ہے کہ ریاستی الیکشن کمیشن ہویا پھر مرکزی الیکشن کمیشن اس کے دائرکار ہے اور کوئی بھی ادارہ جمہوری دائرکار کے باہر جاکر کام نہیںکرسکتا ۔ رائے دہی اور فرضی ووٹرس کے متعلق جس قدر ہوسکے ہمارے ادارہ تشہیری مہم چلاتے ہوئے رائے دہندوں کے اندر پولنگ کے دن گھر وں سے پولنگ مراکز تک جانے کا حوصلہ پیدا کررہے ہیں۔ اس کے علاوہ بھی جمہوریت میں سیول سوسائٹی ‘ سماجی تنظیموں اور رضاکارانہ اداروں کو اس ضمن میںشعور بیداری کا پورا اختیار دیاگیا ہے۔انہوں نے کہاکہ تلنگانہ الیکشن واچ 2018کے تحت الکٹورل ریفارمرس کے لئے جوبھی اقدامات کیے جائیں گے وہ جمہوری دائرے میںرہ کرکیے جانے والے اقدامات ہوں ‘ انہیں ریاستی الیکشن کمیشن کا پورا تعاون حاصل رہے گا۔مسٹرراجت کمار نے کہاکہ انتخابی دھاندلیوں کی روک تھام کے لئے درکار اصلاحات پر عمل آوری تجویز اور مشاورت سے یقینی بنائی جاسکتی ہے۔ اس لئے آزاد نہ پلیٹ فارم کی ضرورت ہے جہاں پر کھلے ذہن اور وسیع قلب کے ساتھ ان موضوعات پر صحت مند بحث کی جاسکے۔ مسٹررجت کمار نے کہاکہ انتخابات جمہوریت کا سب سے بڑا تہوار ہے ‘ اس کو جشن کے طور پر مناتے ہوئے ہر شہری کو اپنی حصہ داری کا ثبوت دینا ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ تین لاکھ سے زائد متوفی رائے دہندوں کے نام اب تک ووٹر لسٹ سے ہٹائے گئے ہیںجبکہ دیڑھ لاکھ کے قریب دوہرے ناموں کو بھی منسوخ کرنے کاکام کیاگیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ یہ عوام کی ذمہ داری ہے کہ وہ متعلقہ ریٹرنگ آفیسر وں سے رجوع ہوکر اپنے نام کی جانچ کرائیں۔ مسٹر رجت کمار نے کہاکہ حیدرآباد کی جہاں تک بات کی جائے تو یہاں پر زیادہ تر کرایہ کے مکانوں میںمقیم ہیں۔انہو ںنے مزیدکہاکہ ہر دوسرے سال ان کے گھر تبدیل ہوتے رہتے ہیں۔ یہی وجہہ ہے کہ ایک سے زائد اسمبلی حلقوں میں ایسے ناموں کا اندرج عمل میںآیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ کمیشن اس بات کی تحقیق کررہا ہے مگر کرایہ کے مکانوں میںمقیم شہریوں پر بھی یہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ مکان کی تبدیلی کے ساتھ ہی بلدیہ سے رجوع ہوکر اپنے الیکشن ائی ڈی کارڈس کا پتہ بھی تبدیل کرالیں۔ مسٹر پدمانابھیا نے کہاکہ صاف اور شفاف الیکشن کو یقینی بنانے کے لئے ملزم امیدواروں کو انتخابی عمل سے دور رکھنے کی ضرورت ہے۔انہو ںنے مزیدکہاکہ جب تک امیدواروں کو جوابدہ نہیںبنایاجاتا تب تک عوامی مسائل کا حل ممکن نہیںہے۔

TOPPOPULARRECENT