Tuesday , November 21 2017
Home / شہر کی خبریں / ’صحافتی غیر جانبداری کا مطلب خاموش تماشائی بننا نہیں ہے‘

’صحافتی غیر جانبداری کا مطلب خاموش تماشائی بننا نہیں ہے‘

شعبہ ماس کمیونیکیشن اینڈ جرنلزم کی جا نب سے منعقدہ ورکشاپ سے وائس چانسلر کا خطاب
حیدرآباد ۔ 23 ۔ مارچ : ( پریس نوٹ ) : موجودہ دور میں درپیش چیلنجس کا سامنا کرنے کے لیے طلباء کو چاہیے کہ و ہ نصاب کے علاوہ بھی معلومات سے اپنے آپ کو ہم آ ہنگ کریں ۔ ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر محمد اسلم پرویز وائس چانسلر مولانا آ زاد نیشنل اردو یونیورسٹی نے کیا۔ وہ آج شعبہ ماس کمیونیکیشن اینڈ جرنلزم کی جا نب سے الکٹرونک میڈیا پر منعقدہ پانچ روزہ ورکشاپ کی افتتاحی تقریب سے خطاب کررہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ مطالعے کی عادت کا کوئی متبادل نہیں ، اور موجودہ دور میں صرف نصاب کا مطالعہ کامیابی کا ضامن نہیں بن سکتا۔ انہوں نے طلبائے صحافت کو مستقبل کے صحافیوں سے تعبیر کرتے ہوئے اس بات کی تلقین کی کہ صحافت کے میدان میں غیرجانبداریت اور معروضیت کواپنا اصول بنائیں۔ مہمان خصوصی کمال خان ‘ ریزیڈنٹ ایڈیٹر این ڈی ٹی وی نے اپنے کلیدی خطبہ میں کہا کہ زندگی کے دیگر شعبہ حیات کی طرح الکٹرنک میڈیا میں بھی مثبت اور منفی پہلو موجود ہے۔ منفی چینلوں کی شکایت کا رونا رونے سے بہتر ہے کہ آپ اپنے ہاتھ میں موجود ریموٹ کنٹرول سے چینل بدل کر جواب دیں۔اپنی ناپسندیدگی کے اظہار کا اس سے زیادہ موثر طریقہ نہیں ہو سکتا ہے ۔ صدر شعبہ ماس کمیونیکیشن اینڈ جرنلزم پروفیسر احتشام احمد خان نے الکٹرانک میڈیا پر پانچ روزہ ورکشاپ کا تعارف پیش کیااور اسکی اہمیت و افادیت پر روشنی ڈالی ۔ نظامت کے فرائض طالب علم عامر احسن نے اور ہدیہ تشکر طالبہ تحیت کلثوم نے پیش کیا ۔

TOPPOPULARRECENT