Sunday , November 19 2017
Home / سیاسیات / صدارتی انتخابات کیلئے غیر بی جے پی پارٹیوں کے اتحاد کی کوشش

صدارتی انتخابات کیلئے غیر بی جے پی پارٹیوں کے اتحاد کی کوشش

جے ڈی یو قائد شرد یادو کا بیان، مشترکہ امیدوار کا فیصلہ اتحاد کے بعد ، بی جے پی کے مقابلہ کا عزم
وڈودرا 24 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) جنتادل (یونائیٹیڈ) کے سابق صدر شرد یادو نے آج کہاکہ غیر بی جے پی پارٹیاں اتفاق رائے پیدا کرنے کی کوشش کررہی ہیں تاکہ صدارتی انتخابات کے لئے ایک مشترکہ امیدوار کا انتخاب کیا جاسکے۔ پی ٹی آئی سے بات چیت کرتے ہوئے اُنھوں نے کہاکہ غیر بی جے پی پارٹیوں کو یکجا کرنا اور صدارتی انتخابات کے لئے ایک مشترکہ امیدوار کا انتخاب آسان کام نہیں ہے لیکن انتخابات کے لئے ابھی کافی وقت ہے۔ صدارتی انتخابات جولائی میں مقرر ہیں۔ شرد یادو نے کہاکہ اتحاد ہوجانے کے بعد یہ پارٹیاں فیصلہ کریں گی کہ مشترکہ امیدوار کون ہونا چاہئے۔ تاہم اُنھوں نے کہاکہ سیاسی پارٹیوں نے ناموں پر تبادلہ خیال ابھی شروع نہیں کیا ہے۔ شرد یادو کل رات دیر گئے یہاں پہونچے تھے اور یہاں سے ضلع کے قصبہ واگھوڈیا آج صبح روانہ ہوگئے جہاں جنتادل (متحدہ) کا سماجی انصاف جلوس نکالا جارہا ہے تاکہ قبائیلیوں کے حقوق کا تحفظ کیا جاسکے۔ یہ جلوس آج اختتام پذیر ہوگا۔ اترپردیش اور اتراکھنڈ میں بی جے پی کی شاندار کامیابی کی وجہ سے اپوزیشن کی اتحاد قائم کرنے کی کوششوں میں تیزی پیدا ہوگئی ہے۔ صدارتی انتخابات سے پہلے غیر بی جے پی پارٹیوں کا اتحاد قائم کرنے کی بھرپور کوشش ہورہی ہے۔ کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا (مارکسسٹ) کے جنرل سکریٹری سیتارام یچوری نے حال ہی میں صدر کانگریس سونیا گاندھی سے ملاقات کی تھی تاکہ ایک مشترکہ امیدوار انتخابات میں کھڑا کرنے کے امکانات تلاش کئے جائیں۔ راشٹریہ جنتادل کے صدر لالو پرساد بہار طرز کے عظیم اتحاد (مہا گٹھ بندھن) قائم کرنے کی باتیں کررہے ہیں۔ مغربی بنگال کی چیف منسٹر ممتا بنرجی قبل ازیں علاقائی پارٹیوں کے ایک وسیع تر اتحاد کی اپیل کرچکی ہیں جو بھارتیہ جنتا پارٹی کا مقابلہ کرسکے۔

TOPPOPULARRECENT