Wednesday , November 14 2018
Home / سیاسیات / صدرجمہوریہ کا تغلق شاہی حکمنامہ، عاپ ایم ایل ایز کو نااہل قرار دینے پر ردعمل

صدرجمہوریہ کا تغلق شاہی حکمنامہ، عاپ ایم ایل ایز کو نااہل قرار دینے پر ردعمل

مفادات حاصلہ اور انتقامی سیاست دیرپا نہیں ہوتی، بی جے پی قائدین یشونت اور شتروگھن سنہا کے بیانات

نئی دہلی 22 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی کے باغی قائدین یشونت سنہا اور شتروگھن سنہا عام آدمی پارٹی کی تائید پر اُتر آئے جبکہ پارٹی کے 20 ارکان اسمبلی کو صدرجمہوریہ ہند کی جانب سے اسمبلی کے لئے نااہل قرار دیئے جانے کے الیکشن کمیشن کی سفارش کی توثیق کردی۔ اُنھوں نے اسے تغلق شاہی حکمنامہ قرار دیا۔ دہلی میں برسر اقتدار عام آدمی پارٹی کو اُس وقت سخت دھکہ لگا تھا جبکہ صدرجمہوریہ رامناتھ کووند نے اُس کے 20 ارکان اسمبلی کو منافع بخش عہدوں پر فائز ہونے کی بناء پر اسمبلی کے لئے نااہل قرار دینے کی الیکشن کمیشن کی سفارش کی توثیق کردی تھی۔ اِس فیصلے سے پارٹی نے کہا تھا کہ دستوری ارباب مجاز مرکزی حکومت کی ’’گھریو خادمہ‘‘ کے طور پر کام کررہے ہیں۔ کووند نے ہفتے کے دن الیکشن کمیشن کی سفارشات کی اِس سلسلہ میں توثیق کردی ہے۔ صدرجمہوریہ کا حکمنامہ مکمل طور پر فطری انصاف کا اسقاط ہے۔ کوئی سماعت نہیں۔ ہائیکورٹ کے حکمنامے کے لئے انتظار نہیں۔ یہ تغلق شاہی کا بدترین حکمنامہ ہے۔ یشونت سنہا نے اپنے ٹوئٹر پر تحریر کرتے ہوئے یہ طنزیہ تبصرہ کیا۔ بی جے پی کے باغی رکن پارلیمنٹ شتروگھن سنہا نے کہاکہ عام آدمی پارٹی کے خلاف انتقام کی سیاست دیرپا نہیں رہے گی۔ اُنھوں نے کہاکہ انتقامی سیاست یا مفادات حاصلہ کی سیاست دیرپا نہیں ہوتی۔ فکر نہ کریں اور خوشی منائیں۔ اُنھوں نے اپنے ٹوئٹر پر تحریر کیاکہ اُمید ہے کہ ہم آپ کے ساتھ الوہی انصاف جلد ہونے کی خواہش اور دعا کرسکتے ہیں، جتنی جلد ایسا ہوسکے بہتر ہوگا۔ عام آدمی پارٹی کی ٹیم اور خاص طور پر عام آدمی پارٹی کو بہت بہت بدھائی۔ یاد رکھیں جب راستہ دشوار گزار ہوجاتا ہے تو سختی اپنے آپ ختم ہوجاتی ہے۔ ستیہ مے وجیتے جئے ہند۔ اُنھوں نے مسلسل اپنے ٹوئٹر پر تحریریں شائع کرتے ہوئے یہ بات کہی۔ دونوں قائدین اٹل بہاری واجپائی کابینہ میں شامل تھے۔ اُنھوں نے کھل کر وزیراعظم نریندر مودی اور اُن کی حکومت کی پالیسیوں پر اپنی ناراضگی ظاہر کی ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT