Wednesday , August 22 2018
Home / شہر کی خبریں / صدرنشین تلنگانہ قانون ساز کونسل پر حملہ افسوسناک

صدرنشین تلنگانہ قانون ساز کونسل پر حملہ افسوسناک

اسمبلی و کونسل کا یوم سیاہ، ٹی آر ایس ارکان مقننہ کا ردعمل
حیدرآباد۔ 12مارچ (سیاست نیوز) ٹی آر ایس ارکان مقننہ نے اسمبلی اور کونسل کے لیے آج سیاہ دن سے تعبیر کیا اور کہا کہ کانگریس کی جانب سے صدرنشین قانون ساز کونسل پر حملہ افسوسناک اور قابل مذمت ہے۔ ارکان مقننہ پی سدھاکر ریڈی، پی راجیشور ریڈی، بی وینکٹیشورلو، وی گنگادھر گوڑ، ناراداس لکشمن رائو، جی کملاکر اور سرینواس گوڑ نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ منصوبہ بند انداز میں صدرنشین کونسل کو نشانہ بنایا گیا۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ بعض کانگریسی ارکان مئے نوشی کے بعد ایوان میں آئے تھے اور انہوں نے ہنگامہ آرائی کی۔ اسپیکر مدھوسدھن چاری کو ایسے ارکان کے خلاف سخت کارروائی کرتے ہوئے باقی میعاد کے لیے معطل کردینا چاہئے۔ انہوں نے قانون کے مطابق کارروائی اور حملے کے ذمہ دار ارکان کی گرفتاری کا مطالبہ کیا۔ ٹی آر ایس ارکان نے کہا کہ اسمبلی کی تاریخ میں یہ پہلا موقع ہے جب کونسل کے صدرنشین کو نشانہ بنایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریسی ارکان منصوبہ بند انداز میں ایوان پہنچے تھے۔ ان کی سرگرمیوں کے بارے میں حکومت کو پہلے ہی اطلاع مل چکی تھی لہٰذا حالات کو بگاڑنے سے بچانے کے لیے مارشلس کو متعین کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ 130 سالہ تاریخ رکھنے والی کانگریس پارٹی کے قائدین کو اس حرکت پر شرمسار ہونا چاہئے۔ پی راجیشور ریڈی نے کہا کہ اجلاس کے پہلے ہی دن کانگریس ارکان کی حرکتوں سے ان کے عزائم کا پتہ چلتا ہے۔ پسماندہ طبقات سے تعلق رکھنے والے صدرنشین کونسل سوامی گوڑ پر ایوان میں حملے کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ سوامی گوڑ پر حملہ دراصل پسماندہ طبقات پر حملے کے مماثل ہے۔ انہوں نے کہا کہ بعض کانگریسی ارکان شراب نوشی کے بعد ایوان کو آئے تھے لہٰذا ان کے خلاف سخت کارروائی کی جانی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ ایک رکن اسمبلی کی حرکت سے عاجز آکر جانا ریڈی کو اپنی نشست چھوڑنی پڑی۔ گورنمنٹ وہپ بی وینکٹیشورلو نے سوامی گوڑ پر حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ جان بوجھ کر پسماندہ طبقات سے تعلق رکھنے والے قائد کو نشانہ بنایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ اس حرکت کے لیے کانگریس پارٹی کو خمیازہ بھگتنا پڑے گا۔ ناراداس لکشمن رائو نے حملے کے ذمہ دار ارکان کو باقی میعاد کے لیے معطل کرنے کا مطالبہ کیا۔ سرینواس گوڑ نے کہا کہ کانگریس پارٹی کی تاریخ تشدد پر مبنی ہے اور پارٹی قائدین نے ایوان کے دوران صدرنشین کونسل پر حملہ کرتے ہوئے اپنا کلچر پیش کیا ہے۔ جی کملاکر نے کانگریس قائدین کو انتباہ دیا کہ اسمبلی اور کونسل میں ان کی سرگرمیوں کا منہ توڑ جواب دیا جائے گا۔ کانگریس پارٹی عوام کے درمیان جب بھی جائے گی انہیں ناراضگی کا سامنا کرنا پڑیگا۔

TOPPOPULARRECENT