Saturday , December 16 2017
Home / اضلاع کی خبریں / صدر ضلع وقف کمیٹی محمد جاوید اکرم کا دورہ کاماریڈی

صدر ضلع وقف کمیٹی محمد جاوید اکرم کا دورہ کاماریڈی

رحمانیہ وقف کامپلکس کے کرایہ داروں سے ملاقات
کاماریڈی:6؍ ستمبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) صدر ضلع وقف کمیٹی محمد جاوید اکرم نے کل کاماریڈی کا دورہ کرتے ہوئے رحمانیہ وقف کامپلکس کرایہ داروں سے بات چیت کرتے ہوئے زیر التواء کرایہ کے بقایہ جات کی ادائیگی کیلئے ترغیب دیتے ہوئے کرایہ وصول کیا واضح رہے کہ ریاستی وقف بورڈ کی جانب سے ریلوے بریج کے قریب واقع مسجد تحسین سے متصلہ قدیم قبرستان پر سابق صدرنشین وقف بورڈ سید یوسف علی کے دوران 60 ملگیاں کی تعمیر عمل میں لائی تھی اور یہ کامپلکس 2006 ء سے کرایہ دار وقف بورڈ کو کرایہ ادا نہیں کررہے تھے۔2006ء سے قبل ریلوے بریج کی تعمیر کے موقع پر سابق ریاستی ووزیر قانون ساز کونسل کے اپوزیشن لیڈر محمد علی شبیر نے کرایوں کو 2006ء تک معاف کردیا تھا۔ 2006 ء سے 2015 ء تک 60 کرایہ دار بقایہ جات کی ادائیگی میں لاپرواہی برتنے پر کانگریس کے دور حکومت میں وقف کامپلکس کے نگران کار کمیٹی کو تشکیل دیتے ہوئے اس کے ذریعہ کرایوں کی وصولی و دیگر انتظامات کمیٹی کے حوالے کیا گیا تھا۔ لیکن کمیٹی بھی کرایوں کی وصولی میں ناکام پر کمیٹی کو برخواست کرتے ہوئے وقف بورڈنے راست نگرانی میں لے لیا تھا۔جس کے تحت ضلع وقف کمیٹی کے صدر محمد جاویداکرم، انسپکٹر آف وقف بورڈ محمد قادر، نائب صدر ضلع وقف کمیٹی سید انور احمدو دیگر نے کل یہاں کاماریڈی پہنچ کر کرایہ داروں سے بات چیت کی اور بقایہ جات کو فوری ادا کرنے کی ہدایت دی۔ بقایہ جات ادا نہ کرنے کی صورت میں نوٹس جاری کرتے ہوئے ملگیوں کو وقف بورڈ کی تحویل میں لینے کا انتباہ دیا۔ جس پر کرایہ دار نے صدر ضلع وقف کمیٹی محمد جاوید اکرام، نائب صدر ضلع وقف کمیٹی سید انور احمدسے بات چیت کے بعد 5 قسطوں میں کرایہ کی ادائیگی کا تیقن دیا۔ جس پر انہوں نے رضامندی طاہر کرتے ہوئے موجودہ کرایہ فوری ادا کرنے کی ہدایت دی۔ صدر ضلع وقف کمیٹی نے کہا کہ وقف کی اراضیات اللہ کی ہوتی ہے اور اس کا تحفظ ہر ایک کی ذمہ داری ہے۔ضلع وقف کمیٹی ضلع کے وقف کی اراضیات کے تحفظ کیلئے اقدامات کا سلسلہ جاری رکھی ہوئی ہے۔ نظام آباد، کاماریڈی و دیگر مقامات پر واقع اراضیات کے تحفظ کیلئے اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ مسٹر جاوید اکرم نے ضلع وقف کمیٹی کی جانب سے ان کے چارج لینے کے بعد کئے گئے اقدامات پر بھی روشنی ڈالتے ہوئے ریاستی وقف بورڈ سے اس خصوص میں ضلع وقف کمیٹی کی جانب سے نمائندگی کا سلسلہ جاری رکھی ہوئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT