Wednesday , November 22 2017
Home / Top Stories / صدر فلسطینی اتھاریٹی محمود عباس کے ہاتھوں ویٹیکن سٹی کے فلسطینی سفارت خانہ کا افتتاح

صدر فلسطینی اتھاریٹی محمود عباس کے ہاتھوں ویٹیکن سٹی کے فلسطینی سفارت خانہ کا افتتاح

ویٹیکن سٹی ۔15جنوری ( سیاست ڈاٹ کام ) صدر فلسطینی اتھاریٹی محمود عباس نے انتباہ دیا کہ اسرائیل کے لئے امریکی سفارت خانہ کو تل ابیب سے یروشلم منتقل کرنے سے امن کارروائی میں کوئی مدد نہیں ملے گی ‘ وہ ویٹیکن سٹی میں فلسطینی سفارت خانہ کا افتتاح کررہے تھے ۔ قبل ازیں انہوں نے پوپ فرانسیس سے نجی طور پر ملاقات کی تھی اور انہیں سفارت خانہ کے افتتاح کی دعوت دی تھی ۔ یہ سفارت خانہ ویٹیکن سٹی کے روبرو ایک عمارت میں قائم کیا گیا ہے جہاں پیرو اور برکینا فاسو کے سفارت خانے بھی قائم ہیں ۔ محمود عباس نے عربی میں تقریر کرتے ہوئے کہا کہ ہم ابھی کچھ نہیں کہہ سکتے کیونکہ یہ واقعہ ہنوز پیش نہیں آیا ہے لیکن اگر ایسا کیا جائے تو اس سے امن کارروائی کو کوئی فائدہ نہیں پہنچے گا ۔ انہوں نے اُمید ظاہر کی کہ ایسا نہیں ہوگا ۔ فرانسیسی روزنامہ ’’ لی فگارو‘‘ کو انٹرویو دیتے ہوئے محمود عباس نے کہا کہ فلسطینی اسرائیل میں اپنے تشخص کو برعکس کردینے پر غور کریں گے ۔ اگر ڈونالڈ ٹرمپ امریکی سفارت خانہ یروشلم منتقل کردیں ۔ انہوں نے کہا کہ قبل ازیں فلسطینی منتخبہ صدر کو مکتوب روانہ کر کے ان سے خواہش کرچکے ہیں کہ سفارت خانہ کو یروشلم منتقل نہ کیا جائے ‘ اس سے نہ صرف امریکہ کا یہ دعویٰ متاثرہوگا کہ وہ تنازعہ کے بارے میں غیر جانبدار کردار ادا کررہا ہے ۔ اس نے اسرائیل کے خلاف قرارداد پر غیرحاضر رہ کر جو تاثر پیدا کیا ہے وہ بھی ختم ہوجائے گا ۔۰

TOPPOPULARRECENT