Monday , December 18 2017
Home / ہندوستان / صرف ہندوستانی معیشت عالمی بحران سے غیر متاثر

صرف ہندوستانی معیشت عالمی بحران سے غیر متاثر

ترقی کے ذریعہ غریبی و ناخواندگی جیسے مسائل سے نجات ممکن : وزیراعظم مودی
نئی دہلی ۔ /14 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے کہا ہے کہ ہندوستان ہی وہ واحد معیشت ہے جو ساری دنیا کو متاثر کرنے والے عالمی اقتصادی بحران سے متاثر نہیں ہوئی ہے ۔ جس کی بنیادی وجہ وہ پالیسیاں ہیں جنہیں حکومت کی طرف سے روبہ عمل لایا گیا ۔ مودی نے آج یہاں ایک سماجی مصلح دیانند سرسوتی کے 140 ویں یوم پیدائش کے ضمن میں منعقدہ ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ ’’ بین الاقوامی مالیاتی ادارہ (آئی ایم ایف) عالمی بینک ہر کوئی یہی کہہ رہا ہے ۔ ساری دنیا اقتصادی بحران سے گزررہی ہے لیکن صرف ہندوستان ہی ہے جو تیز رفتاری کے ساتھ ترقی کررہا ہے ۔ یہ ایک انوکھی صورتحال سے جس میں ساری دنیا متاثر ہورہی ہے اور ہندوستان ترقی کررہا ہے ‘‘ ۔ انہوں نے کہا کہ ’’ساری دنیا میں لوگ یہ کہہ رہے ہیں کہ حکومت کی طرف سے کئے جانے والے اقدامات کے نتیجہ میں ہندوستان تیز رفتار ترقی کرنے والی معیشت بن رہا ہے ‘‘ مودی نے کہا کہ ’’ ایک ہی چیز ہے جو ہمیں اپنے تمام مسائل جیسے  غریبی اور ناخواندگی سے نجات دلاسکتی ہے تو وہ صرف ترقی ہی ہے ‘‘ ۔ وہ ان ریمارکس کے ذریعہ اپنی حکومت کے سماجی و معاشی پروگراموں مدرا اور فروغ ہنر مندی کا حوالہ دے رہے تھے ۔ مودی نے کہا کہ ’’ مدرا یوجنا سے دو کروڑ عوام کو فائدہ پہونچا اور ان میں ایک لاکھ کروڑ روپئے تقسیم کئے گئے ۔ عوام کو مالی مدد فراہم کی گئی اور ہمیں ان پر بھروسہ ہے ‘‘ ۔ ہندوستان میں 35 سال سے کم عمر کے افراد کی 60 فیصد آبادی کا حوالہ دیتے ہوئے مودی نے کہا کہ اس اعتبار سے دنیا میں ہندوستانی نوجوانوں کا ملک ہے ۔ وزیراعظم نے کہا کہ ’’اب حکومت اس بات پر توجہ مرکوز کررہی ہے کہ نوجوانوں کی طاقت کو ملک کی ترقی کے لئے کس طرح استعمال کیا جائے ۔ چنانچہ ہم نے نوجوانوں کے لئے نہ صرف فروغ ہنر مندی کے پروگرام شروع کئے ہیں بلکہ اس مقصد کے لئے ایک نئی وزارت قائم کی گئی ہے جس کا اپنا بجٹ ہے اور پروگراموں پر پیشرفت کے لئے افسران فراہم کئے گئے ہیں ‘‘ ۔ انہوں نے  2030 ء تک دنیا کی اکثر ملکوں کی آبادی میں عمر رسیدہ افراد کا بھاری اضافہ ہوجائے گا اور جب انہیں ہنرمند نوجوانوں اور قوت افرادی کی ضرورت ہوگی ۔ ہندوستان ہی ان ملکوں کو ہنرمند اور تکنیکی طور پر قابل افرادی قوت فراہم کرسکتا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT