Friday , September 21 2018
Home / شہر کی خبریں / صنعت نگر حلقہ اسمبلی میں سیوریج لا ئینK-51پروجیکٹ تعطل کا شکار

صنعت نگر حلقہ اسمبلی میں سیوریج لا ئینK-51پروجیکٹ تعطل کا شکار

9سال میں 7کروڑروپئے کی لاگت کے اس پروجیکٹ پر30کروڑ75لاکھ روپئے خرچ ، پراجکٹ عدم تکمیل

9سال میں 7کروڑروپئے کی لاگت کے اس پروجیکٹ پر30کروڑ75لاکھ روپئے خرچ ، پراجکٹ عدم تکمیل
حیدرآباد /12ڈسمبر(سیاست نیوز)۔صنعت نگر،بلکم پیٹ اور امیرپیٹ بلدی واڑس میں سیوریج مسائل پرقابوپانے کے لئے شروع کیاگیا K-51پروجیکٹ تعطل کا شکار ہوگیا ہے ۔ اس پروجیکٹ کے تحت فتح نگر سے دھرم کرم روڈ امیر پیٹ تک 1800 ایم ایم ڈائی میٹر کی سیوریج لائن بچھانے کا منصوبہ بنایاگیاتھا۔حیدرآباد میٹروپولیٹن واٹرسپلائی اینڈسیوریج بورڈ نے اس پروجیکٹ کے لیے 7کروڑروپئے منظورکیے تھے۔تاہم اس سیوریج لائین کو بچھانے کے لیے کھدائی کے دوران بلکم پیٹ میں نیچرکیور ہاسپٹل کے قریب زمین میں بڑے بڑے پتھرنکالنے سے اس پروجیکٹ کام متاثرہوگیاتھا۔ جس کے بعد حکومت نے اس پتھر کونکالنے کے لیے 30سے 75کروڑروپئے منظورکیے ۔ریاستی حکومت کے احکامات کے بعد حیدرآباد میٹروپولیٹن ڈیولپمنٹ اتھاریٹی نے اس پروجیکٹ کے لیے جاپان کے بینک سے قرض بھی حاصل کیاتھا۔جس کے بعد حکام نے ہائیڈرولک جیکس کی مدد سے نیچرکیور ہاسپٹل کے قریب زمین میں موجود پتھرکوہٹادیا۔K-51پروجیکٹ کے تحت سیوریج لائن بچھانے کا کام دوبارہ شروع ہوگیاہے۔تاہم 9سال کی تکمیل کے بعد K-51پروجیکٹ کا کام مکمل نہیں کیاگیاہے۔ 11نومبر 2005 کو رکن اسمبلی صنعت نگر ایم ششی دھرریڈی نے اس پروجیکٹ کے لئے فتح نگر فلائی اوور کے نیچے سنگ بنیادرکھاتھا۔اور اس پروجیکٹ کو 2سال میں مکمل کرنے کا منصوبہ بنایاگیاتھا۔تاہم حیدرآباد میٹروپولٹین واٹرسپلائی اینڈ سیوریج بورڈکی لاپرواہی سے یہ پروجیکٹ تعطل کا شکار ہوگیا۔تقریباً9سال بعد بھی K-51پروجیکٹ کو مکمل نہیں کیاگیاہے۔مقامی لوگوںکا کہناہے کہ سیوریج لائن کے تعمیر اتی کاموں کو جلد مکمل کرنے سے صنعت نگر،بلکم پیٹ اور امیر پیٹ بلدی وارڈس کے عوام کو راحت ملے گی ۔مقامی عوام نے سنگ بنیاد رکھنے کے بعد تعمیراتی کاموں میں 9سال کی تاخیر ہونے پر ناراضگی کا اظہارکیاہے۔واٹر بورڈ کے حکام کا کہناہے کہ اس پروجیکٹ کی کھدائی کے دوران اخراجات میں اضافہ ہوگیاہے ۔اس لئے پروجیکٹ کے کاموں میں تاخیر ہورہی ہے۔بورڈ کے حکام کا کہناہے کہ K-51پروجیکٹ کو جلد مکمل کرنے کے لیے اقدامات کیے جارہے ہیں۔حکام نے بتایاکہ اس پروجیکٹ کی تکمیل کے بعد صنعت نگر،بلکم پیٹ اورامیرپیٹ کے عوام کو آبرسانی کے مسائل سے نجات مل جائیگی۔مقامی لوگوں نے صنعت نگرکے سابق رکن اسمبلی ایم ششی دھرریڈی اور موجودہ رکن اسمبلی تلسانی سرنیواس سے K-51پروجیکٹ کو جلد تکمیل کرانے کے لیے واٹربورڈ کے حکام پردباؤبنانے کا مطالبہ کیاہے۔قدیم سیوریج لائن کی وجہ صنعت نگر،بلکم پیٹ اور امیرپیٹ کے بلدی ڈیویژنوں سے عوام کو مشکلات کا سامناہے۔

TOPPOPULARRECENT