Saturday , April 21 2018
Home / اضلاع کی خبریں / ضلع سنگاریڈی میں نئی 3 بلدیات اور ایک نگر پنچایت کی تشکیل

ضلع سنگاریڈی میں نئی 3 بلدیات اور ایک نگر پنچایت کی تشکیل

190نئے گرام پنچایت کی عنقریب منظوری، اندرون دو ماہ حکومت کے احکام کی اجرائی متوقع
سنگاریڈی۔/21مارچ، ( محمد عبدالقادر فیصل کی رپورٹ) ضلع سنگاریڈی میں نئی تین بلدیا، ایک نگر پنچایت اور 190گرام پنچایت کی منظوری آخری مراحل میں پہنچ گئی اور عنقریب احکامات جاری ہوں گے۔ بتایا جاتا ہے کہ حکومت نے ضلع سنگاریڈی میں امین پور، تیلا پور اور بولارم میں بلدیات اور نارائن کھیڑ کو نگر پنچایت بنایا جائے گا۔ اس کے علاوہ تانڈہ اور چھوٹے مواضعات کو گرام پنچایت کا درجہ دینے حکومت کے وعدہ کی تکمیل کے طور پر مزید نئی 190 گرام پنچاحیتوں کی منظوری تقریباً طئے ہے۔ بلدیات کی تشکیل، موجودہ بلدیات کے حدود میں توسیع اور نئی گرام پنچایت کے منظوری کی تجاویز پر ریاستی وزیر ٹی ہریش راؤ نے اضلاع سنگاریڈی، میدک اور سدی پیٹ کے کلکٹرس اور عوامی منتخبہ نمائندوں کا اجلاس طلب کیا جس کے بعد تجاویز کو منظوری کیلئے حکومت کو روانہ کیا گیا۔ امین پور بلدیہ کی آبادی 37ہزار اور بولارم کی 35 ہزار آبادی ہے ، ان دونوں بلدیات میں کسی بھی موضع کو ضم نہیں کیا گیا جبکہ تیلا پور، ایدولہ ناگولہ پلی اور ویلی میلہ مواضعات کو ضم کرتے ہوئے 25 ہزار آبادی کی تشکیل دیا جارہا ہے۔ نارائن کھیڑ کو نگر پنچایت کا درجہ دیا جارہا ہے۔ نارائن کھیڑ نگر پنچایت میں بھی کسی موضع یا گرام پنچایت کو شامل نہیں کیا گیا۔ نارائن کھیڑ نگر پنچایت کی آبادی 18ہزار 500 بتائی گئی۔ضلع سنگاریڈی میں فی الحال سنگاریڈی، سدا سیو پیٹ اور ظہیرآباد بلدیات اور اندول جوگی پیٹ نگر پنچایت ہے جبکہ مجوزہ اضافہ کے بعد ضلع سنگاریڈی میں بلدیات کی تعدادتین سے بڑھ کر 6 ہوجائیگی اور نگر پنچایت کی تعداد 2 ہوجائیگی۔ بولارم صنعتی علاقہ ہے جبکہ امین پور اور تیلا پور علاقے شہر حیدرآباد کی سرحد پر واقع ہیں اور تیزی کے ساتھ ترقی کررہے ہیں۔ ہائی ٹیک سٹی اور شہر حیدرآباد و سکندرآباد کی قربت کی وجہ سے ان علاقوں میں رہائشی مکانات ، فلیٹس اور پلاٹس کی کافی مانگ ہے۔ موجودہ بلدیات کے حدود میں وسیع اور نئی بلدیات کی تشکیل کی گئی تجاویز کو پیش کیا گیا لیکن بتایا جاتا ہے کہ عوامی نمائندوں اور عوام کی مخالفت اور اعتراضات کے سبب ان تجاویز کو منظور نہیں کیا گیا۔ بلدیہ سنگاریڈی کے حدود کی توسیع کرتے ہوئے اس میں پوتریڈی پلی اور چنتل پلی مواضعات کو ضم کرنے ظہیرآباد بلدیہ میں علی پور رنجہول، ہوتی کے ، چنا حیدرآباد اور پتہ پور مواضعات اندول جوگی پیٹ نگر پنچایت میں صاحب پیٹ، انا ساگر اور پوسانی پیٹ پنچایت کو ضم کرنے کی تجاویز تھی جس کو نامنظور کردیا گیا۔ اس طرح ان بلدیات کے حدود میں توسیع نہیں ہوگی اور جوں کے توں برقرار رہیں گے۔ ضلع سنگاریڈی کے صرف ایک بلدیہ سدا سیو پیٹ کے حدود میں توسیع کی تجویز کو منظور کرنے کی اطلاعات ہیں۔ بلدیہ سدا سیو پیٹ میں سداپور پنچایت کو ضم کردیا جائیگا۔ ضلع سنگاریڈی میں 26 منڈل اور جملہ 475 گرام پنچایت ہے اس میں مزید 190 نئی گرام پنچایتوں کا اضافہ ہوگا جس کے بعد ضلع سنگاریڈی میں گرام پنچایتوں کی جملہ تعداد 665 ہوجائیگی۔ توقع ہے کہ آئندہ دو ماہ میں اس خصوص میں حکومت احکامات جاری کرے گی۔

TOPPOPULARRECENT