Monday , September 24 2018
Home / اضلاع کی خبریں / ضلع عادل آباد کی لوک سبھا اور 8اسمبلی نشستوں پر ٹی آر ایس کاقبضہ

ضلع عادل آباد کی لوک سبھا اور 8اسمبلی نشستوں پر ٹی آر ایس کاقبضہ

عادل آباد۔16مئی( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ضلع عادل آباد میں دس کے منجملہ 8اسمبلی اور عادل آباد لوک سبھا حلقہ پر ٹی آر ایس امیدواروں نے کامیابی حاصل کرتے ہوئے بی جے پی ‘ تلگودیشم اور کانگریس امیدواروں کو شکست سے دوچار کردیا جبکہ مدہول اسمبلی حلقہ میں کانگریس اور نرمل اسمبلی حلقہ میں بی ایس پی امیدوار مسٹر اندرا کرن ریڈی نے کامیابی حاصل کیا

عادل آباد۔16مئی( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ضلع عادل آباد میں دس کے منجملہ 8اسمبلی اور عادل آباد لوک سبھا حلقہ پر ٹی آر ایس امیدواروں نے کامیابی حاصل کرتے ہوئے بی جے پی ‘ تلگودیشم اور کانگریس امیدواروں کو شکست سے دوچار کردیا جبکہ مدہول اسمبلی حلقہ میں کانگریس اور نرمل اسمبلی حلقہ میں بی ایس پی امیدوار مسٹر اندرا کرن ریڈی نے کامیابی حاصل کیا۔ مستقر عادل آباد کے ایس ٹی بوائز اور گرلز ہاسٹل میں صبح 8بجے سے ووٹوں کی گنتی کا کام انجام دیا گیا ۔ عادل آباد ‘ سرپور اور مدہول کیلئے 18راؤنڈ ‘ منچریل آصف آباد کیلئے 19راؤنڈ ‘ نرمل اور بوتھ کیلئے 17راؤنڈ‘ خانہ پور 16راؤنڈ‘ جبلپور 15راؤنڈ ‘ بیلم پلی 14راؤنڈ کے تحت الکٹرانک ووٹنگ مشینوں کے ذریعہ ووٹوں کی گنتی کی گئی جبکہ عادل آباد پارلیمانی حلقہ کیلئے 19راؤنڈ مختص کئے گئے تھے ۔ پوسٹل بیالٹ پیپر کے دونوں کی گنتی میں جہاں تاخیر محسوس کی گئی وہیں الکٹرانک مشینوں کے ذریعہ ووٹوں کی گنتی کا کام دوپہر دو بجے تک مکمل کرلیا گیا ۔ ضلع عادل کے منچریال حلقہ سے ٹی آر ایس امیدوار مسٹر دیواکر راؤ نے 53528 زائد ووٹ کانگریس امیدوار مسٹر ارویندر ریڈی سے حاصل کرتے ہوئے ایک نیا ریکارڈ بنایا ۔ بیلم پلی میں ٹی آر ایس امیدوار درگم چنیا نے سی پی آئی امیدوار و سابق رکن اسمبلی مسٹر گنڈہ ملیش کو ناکام کرتے ہوئے 52528 ووٹوں سے کامیابی حاصل کیا ۔ چنبور اسمبلی حلقہ میں کانگریس کے سابق ریاستی وزیر مسٹر جی ونود کو ٹی آر ایس امیدوار مسٹر این اودیلو نے شکست دیتے ہوئے 26164 ووٹوں کی اکثریت سے کامیابی حاصل کیا ۔ آصف آباد میں کانگریس امیدوار مسٹر اترم سکو کو ٹی آر ایس امیدوار سابق ریاستی وزیر آنجہانی کے بھیم راؤ کی دختر محترمہ کوا لکشمی نے 18748 ووٹوں سے شکست دی ۔ خانہ پور اسمبلی حلقہ جو رکن لوک سبھا مسٹر راٹھوڑ رمیش کا اپنا آبائی مقام تصور کیا جاتا ہے جہاں سے مسٹر راٹھوڑ رمیش اور ان کی اہلیہ محترمہ سمن راٹھوڑ ننے بھی ٹی ڈی پی کے تحت کامیابیاں حاصل کئے تھے ان انتخابات میں مسٹر راٹھوڑ رمیش رکن لوک سبھا کی حیثیت سے اور خانہ وپر حلقہ سے اپنے فرزند مسٹر راٹھوڑ رتیش کو امیدوار بنایا تھا جنہیں ٹیآر ایس امیدوار محترمہ اجمیرا ریکھا نائیک نے 37751 ووٹوں سے شکست سے دوچار کردیا ۔ بوتھ اسمبلی حلقہ میں ٹی آر ایس امیدوار مسٹر راٹھوڑ باپو راؤ نے کانگریس امیدوار کو 26993ووٹوں سے ناکام بنادیا ۔ سرپور حلقہ میں ٹی آر ایس امیدوار مسٹر کے سمیا نے کامیابی حاصل کیا ۔ نرمل حلقہ میں بی ایس پی امیدوار مسٹر اے اندرا کرن ریڈی نے ٹی آر ایس امیدوار مسٹر سری ہری راؤ کو 9628ووٹوں سے شکست دے دی ۔ مدہول اسمبلی حلقہ میں کانگریس امیدوار مسٹر وٹھل ریڈی نے بی جے پی امیدوار کو ناکام بناتے ہوئے 14631 ووٹوں سے کامیابی حاصل کیا جبکہ عادل آباد حلقہ میں مسٹر جوگو رامنا نے اپنا مقام برقرار رکھتے ہوئے بی جے پی امیدوار مسٹر باپلی شنکر کو 14507 ووٹوں سے ناکام بنادیا۔ عادل آباد لوک سبھا حلقہ سے ٹی آر ایس امیدوار مسٹر جی ناگیش تقریباً دو لاکھ ووٹوں کی اکثریت سے کامیابی حاصل کرتے ہوئے کانگریس امیدوار مسٹر نریش جادو کو جہاں ایکطرفہ ناکام بنایا ہیں ۔ مسٹر راٹھوڑ رمیش کو تیسرے درجہ میں ٹھہرا دیا ۔

TOPPOPULARRECENT