Sunday , October 21 2018
Home / شہر کی خبریں / ضلع عادل آباد اوٹنور میں گونڈ اور لمباڑہ طبقہ میں تصادم

ضلع عادل آباد اوٹنور میں گونڈ اور لمباڑہ طبقہ میں تصادم

ایس ٹی زمرہ میں تحفظات فراہم کرنے کے مسئلہ پر احتجاج، دفعہ 144 نافذ
حیدرآباد 15 ڈسمبر (سیاست نیوز) ضلع عادل آباد کے اوٹنور کے استھا پور علاقہ میں دو طبقات کے درمیان ہوئے تصادم کے نتیجہ میں حالات کشیدہ ہوگئے۔ یہ تنازعہ گونڈ (قبائیلی) اور لمباڑہ طبقہ کے درمیان ایس ٹی زمرہ کے تحت تحفظات کی فراہمی کے مسئلہ پر اُٹھ کھڑا ہوا۔ پولیس نے اوٹنور میں دفعہ 144 نافذ کرتے ہوئے ایک سے زائد افراد کے جمع ہونے پر امتناع عائد کردیا ہے۔ ریاپڈ ایکشن فورس کی دو کمپنیوں کو بھی متاثرہ علاقوں میں متعین کیا گیا۔ اِس جھڑپ میں ایک طبقہ سے تعلق رکھنے والے افراد نے شراب کی دوکان کو نذر آتش کرنے کے علاوہ بعض مکانات کو نشانہ بناتے ہوئے کاروں اور موٹر سیکلوں کو تباہ کردیا۔ واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے قبائیلی اور لمباڑہ طبقات کے دو علیحدہ جلسہ عام منعقد ہوئے جس میں اپنے اپنے طبقہ کو سبقت دینے کی بھرپور کوشش کی گئی۔ ایک طبقہ کا یہ دعویٰ ہے کہ دوسرے طبقہ کو غیر ضروری طور پر ایس ٹی زمرہ کے تحت تحفظات فراہم کئے جارہے ہیں۔ دونوں طبقات کے درمیان مخاصمت نے آج فساد کی شکل اختیار کرلی۔

ڈائرکٹر کمشنر مہیندر ریڈی نے موجودہ صورتحال سے نمٹنے کے لئے تین سینئر عہدیداروں مسٹر ڈی ایس چوہان، مسٹر انیل کمار اور نارتھ زون کے انسپکٹرجنرل آف پولیس مسٹر وائی ناگی ریڈی کو متاثرہ علاقہ میں کیمپ کرنے کی ہدایت دی ہے اور یہ عہدیدار صورتحال پر مسلسل نظر رکھے ہوئے ہیں۔ مسٹر مہندر ریڈی نے بتایا کہ حالات کو معمول پر لانے کے لئے مؤثر اقدامات کئے جارہے ہیں اور انھوں نے انتباہ دیا ہے کہ کسی بھی طبقہ کے فرد کی جانب سے تشدد میں ملوث ہونے پر سخت کارروائی کی جائے گی جبکہ تشدد سے متعلق علیحدہ علیحدہ مقدمات درج کئے جارہے ہیں۔ اُنھوں نے کہاکہ دونوں طبقات کے درمیان آج اچانک بھڑک اُٹھے تشدد کے نتیجہ میں اثناپور ضلع نارنور منڈل میں دو افراد اُس وقت ہلاک ہوگئے جب ایک تیز رفتار لاری نے انھیں ٹکر دے دی۔ مسٹر مہندر ریڈی نے دونوں افراد کی ہلاکت کا تعلق تشدد سے ہونے کی تردید کی ہے۔ اُنھوں نے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ افواہوں پر دھیان نہ دیں اور سوشل میڈیا پر آنے والی اطلاعات کو بغیر تصدیق یقین نہ کریں۔

TOPPOPULARRECENT