Tuesday , January 23 2018
Home / اضلاع کی خبریں / ضلع محبوب نگر میں معذورین کی مشکلات برقرار

ضلع محبوب نگر میں معذورین کی مشکلات برقرار

محبوب نگر /19 فروری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) ضلع بھر کے سدرن کیمپس میں معذوروں کی مشکلات برقرار ہیں ۔ معذوری کے فیصد کی صحیح جانچ کیلئے ڈی آر ڈی اے کے زیر اہتمام خصوصی اسٹاف کی تشکیل عمل میں لائی گئی ہے ۔ پہلے 2010میں کوسگی اور اڈاکل منڈلوں کا انتخاب کرتے ہوئے سافٹ ویر کے ذریعہ جانچ کا آغاز کیا گیا ۔ 2011 ء میں ضلع کے تمام منڈلوں میں اس کا آغآز

محبوب نگر /19 فروری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) ضلع بھر کے سدرن کیمپس میں معذوروں کی مشکلات برقرار ہیں ۔ معذوری کے فیصد کی صحیح جانچ کیلئے ڈی آر ڈی اے کے زیر اہتمام خصوصی اسٹاف کی تشکیل عمل میں لائی گئی ہے ۔ پہلے 2010میں کوسگی اور اڈاکل منڈلوں کا انتخاب کرتے ہوئے سافٹ ویر کے ذریعہ جانچ کا آغاز کیا گیا ۔ 2011 ء میں ضلع کے تمام منڈلوں میں اس کا آغآز کیاگیا ۔ پہلے ضلع ہاسپٹل کے مختلف شعبوں کے ماہر ڈاکٹرز کے علاوہ ایریا ہاسپٹل کے ماہر ڈاکٹرز کے ساتھ معذوری کی جاتی اور سافٹ ویر کے ذریعہ تنقیح کرنے کے بعد معذوری کا فیصد طئے کیا جاتا تھا ۔ اس کے بعد اس درخواست کو راشن کارڈ یا آدھار کارڈ سے مربوط کرکے سرٹیفکیٹ جاری کیا جارہا ہے ۔ اب تک ضلع میں 96163 معذورین کی جانچ کی جاچکی ہے ۔ جس میں سے 64490 کو سرٹیفکیٹ کا مستحق قرار دیا گیا ہے ۔ جبکہ 30673 درخواستوں کو مسترد کیا گیا ہے ۔ ضلع میں تاحال 47210 معذؤرین نے وظائف کیلئے درخواستیں داخل کی ہیں ۔ سدرن کیمپ میں تنقیح کے بعد جاری کئے جانے والے سرٹیفکیٹس کو ایم ڈی او آفس روانہ کیا جاتا ہے ۔ لیکن یہاں سے مستحقین کو سرٹیفکیٹس پہونچانے میں بڑی لاپرواہی کرنے کی اطلاعات ہیں ۔ جبکہ مستحق معذورین اس سرٹیفکیٹ کیلئے سدرن کیمپ کے مسلسل چکر کاٹ رہے ہیں ۔ سرٹیفکیٹس کہاں ہیں اس سے وہ لاعلم ہیں ۔ سدرسن کیمپ میں درخواستگذاروں کو نااہل قرار دئے جانے کے باوجود بار بار آنے سے حقیقی معذورین وک مشکلات کا سامنا ہے ۔ درخواستگذاروں کے ہجوم کو قابوف میں رکھنے کیلئے پولیس کی خدمات بھی حاصل کی جارہی ہے ۔ ایسے حالات اکثر نارائن پیٹ ، ونپرتی ، گدوال اور محبوب نگر میں پیدا ہو رہے ہیں ۔ ان حالات کا بغور جائزہ لیا جائے تو اس کا سبب چند بے ضابطگیاں ہیں ۔ درخواستگذار کیلئے ضروری ہے کہ وہ ایم پی ڈی او کی اجازت سے ہی سدرن کیمپ سے رجوع ہو ۔ لیکن درخواستگذار کو نااہل قرار دینے کے باوجود سیاسی دباؤ ڈالتے ہی اس کو مستحق بنانے کیلئے سفارشات کی اطلاعات ہیں ۔ پی ڈی ڈی آر ڈی اے چندر شیکھر ریڈی نے بتایا کہ تمام ایم پی ڈی اوز کو ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ سدرن کیمپ سے وصول ہونے والے سرٹیفکیٹس بلاتاخیر مستحقین تک پہونچائے جائیں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ کیمپ سے جو درخواستذار رجوع ہوتا ہے اس کی تفصیلات محفوظ کردی جاتی ہیں ۔ اس کے دوبارہ رجوع ہونے کا کوئی موقع نہیں رہتا اور وہ خود بخود مسترد ہوجاتا ہے ۔ دوسری طرف حقیقی معذورین ضلع انتظامیہ سے آس لگائے بیٹھے ہیں کہ انہیں جلد سرٹیفکیٹ حاصل ہوں گے اور وہ بھی سرکاری فلاحی اسکیمات سے مستفید ہوسکیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT