Thursday , November 23 2017
Home / شہر کی خبریں / ضلع نلگنڈہ سے کسی بھی وقت کانگریس پارٹی کا صفایا متوقع

ضلع نلگنڈہ سے کسی بھی وقت کانگریس پارٹی کا صفایا متوقع

ایک رکن پارلیمنٹ اور دو ارکان اسمبلی ٹی آرایس میں شامل ہونے کوشاں
حیدرآباد ۔ 4 جون (سیاست نیوز) کانگریس پارٹی کو ضلع نلگنڈہ میں ایک اور جھٹکا لگنے والا ہے۔ ایک رکن پارلیمنٹ اور دو ارکان اسمبلی کسی بھی وقت حکمران ٹی آر ایس میں شامل ہوسکتے ہیں۔ اپنے قائدین کو پارٹی میں باندھ کر رکھنے کیلئے کانگریس پارٹی کی ہر کوشش ناکام ہورہی ہے۔ تلنگانہ میں سیاسی اعتبار سے ٹی آرایس طاقتور بن رہی ہے اور اپوزیشن دن بہ دن کمزور ہورہی ہیں۔ ابھی چار دن قبل ہی تلگودیشم کے واحد رکن پارلیمنٹ مسٹر ملاریڈی نے ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کی ہے۔ تلنگانہ میں کانگریس کے دو لوک سبھا ارکان ہیں جن میں حلقہ لوک سبھا نلگنڈہ کی نمائندگی کرنے والے مسٹر جی سکھیندر ریڈی نے اسی ضلع کی نمائندگی کرنے والے رکن اسمبلی مسٹر بھاسکر راؤ نے چند دن قبل چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر سے ملاقات کرتے ہوئے ٹی آر ایس میں اپنی شمولیت کیلئے رضامندی کا اظہار کیا تھا۔ ریاستی وزیر آبپاشی مسٹر ہریش راؤ نے اس ملاقات کیلئے اہم رول ادا کیا تھا۔ ہریش راؤ ان دونوں کانگریس قائدین کو ٹی آر ایس میں شامل کرنے کیلئے مسلسل رابطے میں ہے۔ اسمبلی حلقہ نلگنڈہ کی نمائندگی کرنے والے کانگریس کے سینئر رکن اسمبلی سابق وزیر مسٹر کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی بھی ٹی آر ایس سے رابطے میں ہے۔ تین دن قبل ہی امریکہ سے حیدرآباد پہنچنے والے مسٹر کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی نے امریکہ میں ریاستی وزیر آئی ٹی کے ٹی آر سے ملاقات کی ہے اور ٹی آر ایس میں شامل ہونے کی ان کے سامنے حامی بھری ہے۔ ضلع نلگنڈہ کی نمائندگی کرنے والے کانگریس کے ایک رکن پارلیمنٹ اور دو ارکان اسمبلی کسی بھی وقت ٹی آر ایس میں شامل  ہوسکتے ہیں۔ تلنگانہ تحریک میں سرگرم حصہ لینے والے 10 ارکان پارلیمنٹ میں مسٹر جی سکھیندر ریڈی واحد رکن پارلیمنٹ ہے جنہوں نے 2014ء کے عام انتخابات میں دوبارہ کامیابی حاصل کی تھی۔ گذشتہ دو سال سے انہوں نے ٹی آر ایس حکومت کے خلاف سرگرم کام کیا ہے۔ پارلیمنٹ سکریٹریز کے خلاف ہائیکورٹ سے رجوع ہوتے ہوئے حکومت کے جی اوکو منسوخ کرانے میں اہم رول ادا کیا ہے۔ ٹی آر ایس حکومت کو تنقید کا نشانہ بنانے کے معاملے میں کوئی بھی موقع نہیں گنوایا ہے۔ تاہم انہوں نے گذشتہ چند دن سے پنا موقف نرم کرلیا ہے۔ اسمبلی حلقہ مریال گوڑہ کی نمائندگی کرنے والے کانگریس کے رکن اسمبلی مسٹر بھاسکر راؤ اپنے حلقہ میں برقی پراجکٹ کے قیام سے مطمئن ہیں اور وہ چیف منسٹر کی کھلے عام ستائش بھی کررہے ہیں جبکہ لمبے عرصہ سے مسٹر کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی کانگریس کی سرگرمیوں سے دور ہے۔ ضلع نلگنڈہ سے صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی اور قائد اپوزیشن مسٹر کے جاناریڈی نمائندگی کرتے ہیں اور مقامی اداروں کے کونسل انتخابات میںکانگریس کے امیدوار کومٹ ریڈی راجگوپال ریڈی کو کامیاب بنانے کیلئے ضلع کے تمام قائدین اتحاد کا مظاہرہ کیا ہے۔ ضلع نلگنڈہ میں ٹی آر ایس کو مستحکم اور طاقتور بنانے کیلئے ٹی آر ایس کے قائدین کانگریس قائدین کو اپنی جماعت میں شامل کررہے ہیں۔ کانگریس کے اہم قائدین کی جانب سے جی سکھیندر ریڈی کے علاوہ دو ارکان اسمبلی کو منانے کی ہر ممکن کوشش کررہے ہیں مگر ان کی کوشش رائیگاں جاتی نظر آرہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT