Wednesday , December 13 2017
Home / اضلاع کی خبریں / ضلع ونپرتی میں 6منی ریزروائیر کی تعمیر کی جائیگی

ضلع ونپرتی میں 6منی ریزروائیر کی تعمیر کی جائیگی

پلاننگ بورڈ وائس چیرمین سی نرنجن ریڈی کی پریس کانفرنس سے خطاب
ونپرتی۔/25اکٹوبر، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ضلع ونپرتی میں کلواکرتی لفٹ ایرگیشن کے تحت 6منی ریزروائر کی تعمیر کرتے ہوئے ضلع ونپرتی کو سرسبز و شاداب کیا جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار تلنگانہ اسٹیٹ پلاننگ بورڈ وائس چیرمین سی نرنجن ریڈی نے کیا۔ آج اپنی قیامگاہ پر پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ متحدہ آندھرا پردیش میں بھاری بجٹ کے تحت آندھرا میں 6 ریزروائر کی تعمیر کی گئی اور سری سیلم کے پانی سے ان ریزروائیر کو لبریز کیا گیا۔ لیکن اس وقت تلنگانہ کے عوامی نمائندے صرف تماشائی بن کر دیکھتے رہے جس سے علاقہ تلنگانہ کو بہت ہی بڑا نقصان ہوا۔ ریاست تلنگانہ کافی جدوجہد کے بعد تشکیل پائی۔ بعد تشکیل کے سی آر برسراقتدار آکر متحدہ آندھرا پردیش میں ہوئے نقصان کی تلافی کیلئے جنگی خطوط پر اقدامات کررہے ہیں۔ نظام اور کاکتیہ دور میں علاقہ تلنگانہ میں جس طرح تالاب سرسبز و شاداب تھے اس طرح تالابوں کو سرسبز و شاداب بنانے کیلئے مشن کاکتیہ اسکیم کے تحت ریاست تلنگانہ کے ہزاروں تالابوں کی از سر نو مرمت کرتے ہوئے سرسبزو شاداب کیا جارہاہے جس سے دیہاتوں میں کنٹے تالاب اور پانی سے لبریز نظر آرہے ہیں جس سے کسانوں کے چہروں پر مسکراہٹ دکھائی دے رہی ہے۔ نقل مقام کرکے جانے والے کسان اپنے دیہاتوں میں کام کاج میں مصروف ہیں اس طرح پالمور رنگاریڈی پراجکٹ تعمیر کرنے کا ریاستی حکومت نے بیڑہ اٹھایا ہے جس سے متحدہ محبوب نگر رنگاریڈی کے کئی تعلقوں کو سیراب کیا جاسکتا ہے۔ ریاست تلنگانہ میں ریزروائیر کی کمی کی وجہ سے پانی کو محفوظ کرنے کیلئے کوئی راستہ نہیں ہے۔ اس کو مدنظر رکھتے ہوئے پالموررنگاریڈی پراجکٹ کی تعمیر کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ متحدہ آندھرا پردیش میں تعمیر کئے گئے پراجکٹوں کو ری ڈیزائن کرتے ہوئے اس میں اسٹوریج کی سطح کو اضافہ کرنے کا ریاستی حکومت منصوبہ رکھتی ہے۔ علاقہ تلنگانہ میں تالاب اور کنٹے بارش کے پانی کے ساتھ ساتھ پراجکٹوں کے پانی سے سال بھر سرسبز و شاداب بنانے کیلئے اقدامات کئے جارہے ہیں۔سال بھر تالابوں میں پانی رہنے سے کسانوں ، جانوروں، مویشیوں، مچھیروں کو روزگار فراہم ہوگا جس سے ریاست تلنگانہ میں بیروزگاری کا خاتمہ ہوگا۔ پالمور رنگاریڈی پراجکٹ کو تعمیر کرنے کیلئے 2005 انتخابات سے قبل ہی منصوبہ بنایا گیا تھا اور اس کا سنگ بنیاد 2015 میں رکھا گیا اور اس کا کام تیزی سے جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ پالمور رنگاریڈی پراجکٹ کی تعمیر میں کچھ لوگوں نے رکاوٹیں پیدا کی ہیں لیکن ہزاروں رکاوٹیں پیدا کریں اس پراجکٹ کی تعمیر مکمل کرکے بنانے کا عزم کیا۔ ضلع ونپرتی میں کلواکرتی لفٹ ایریگیشن کے تحت کنالوں کے ذریعہ آنے والے پانی کو اسٹوریج کرنے 6 منی ریزروائیر کی تعمیر کیلئے ایک لائحہ عمل تیار کرتے ہوئے اس کیلئے سروے بھی مکمل کرلیا گیا ہے۔ اس میں پانگل میں ایک ریزروائر، پولکے پلی اور جیرکاپلی کے درمیان ریزروائیر، پولکے پاڑ میں ایک ریزروائیر، پھدارم کے بڑے تالاب کو ریزروائیر، ویلپور کگوپال سمندرم ریزروائیر، گھن پور شاہ پور کے درمیان ایک ریزروائیر تعمیر کئے جائیں گے۔ سروے مکمل ہوچکے ہیں اس کا تخمینہ لگانا باقی ہے۔ مکمل رپورٹ تیار ہونے کے بعد ٹنڈر طلب کیا جائے گا۔ علاقہ تلنگانہ میں منی ریزروائیر نہ ہونے سے سری سیلم پراجکٹ میں پانی ہونے کے باوجود علاقہ تلنگانہ اس سے فائدہ اٹھانے سے قاصر ہے۔ اس کو مدنظر رکھتے ہوئے منی ریزروائیر کی تعمیر کی جارہی ہے۔ میونسپل چیرمین رمیش گوڑ، لائبریری چیرمین بی لکشمیا، غلام قادر خان، سردار خان، گٹو یادو، شنکر نائیک، محمد ارشد، جی ایم غوث، محمد عزیز خاں کے علاوہ دیگر موجود تھے۔

 

 

TOPPOPULARRECENT