Wednesday , July 18 2018
Home / ہندوستان / ضلع کپواڑہ میں تلاشی آپریشن بدستور جاری

ضلع کپواڑہ میں تلاشی آپریشن بدستور جاری

کارروائی کے دوران فائرنگ کا تبادلہ ، ایک فوجی جوان ہلاک
سری نگر، 22نومبر (سیاست ڈاٹ کام) شمالی کشمیر کے سرحدی ضلع کپواڑہ میں بڑے پیمانے کا تلاشی آپریشن آج مسلسل دوسرے دن بھی جاری رہا۔ خیال رہے کہ کپواڑہ کے زرہامہ میں منگل کے روز تلاشی آپریشن کے دوران جنگجوؤں کے حملے میں ایک فوجی اہلکار ہلاک جبکہ دو دیگر زخمی ہوگئے ۔ مہلوک فوجی اہلکار کی شناخت جتیندر کمار کے بطور کی گئی ہے ۔ وزارت دفاع کے ترجمان کرنل راجیش کالیا نے یو این آئی کو بتایا ‘زرہامہ میں سیکورٹی فورسز کا تلاشی آپریشن بدستور جاری ہے ‘۔ انہوں نے بتایا ‘جاری تلاشی آپریشن کے دوران ہمارا ایک فوجی اہلکار جاں بحق جبکہ دو دیگر زخمی ہوگئے ہیں’۔ انہوں نے بتایا کہ زرہامہ میں جنگجوؤں کی موجودگی سے متعلق خفیہ اطلاع ملنے پر فوج کی 21 راشٹریہ رائفلز (آر آر)، 98 بٹالیں سینٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) اور جموں وکشمیر پولیس کے اسپیشل آپریشن گروپ (ایس او جی) نے مذکورہ علاقہ میں منگل کو دوپہر کے وقت تلاشی آپریشن شروع کیا۔ تاہم جب سیکورٹی فورسز ایک مخصوص جگہ کی جانب پیش قدمی کررہے تھے تو وہاں موجود جنگجوؤں نے ان پر فائرنگ کی۔ کرنل کالیا نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز نے جوابی فائرنگ کی جس کے بعد طرفین کے مابین گولہ باری میں ایک فوجی اہلکار ہلاک جبکہ دو دیگر زخمی ہوگئے ۔ انہوں نے بتایا کہ جنگجوؤں کو فرار ہونے سے روکنے کے لئے سیکورٹی فورسز کی اضافی نفری علاقہ میں بدستور تعینات ہے ۔ اس سے قبل کپواڑہ کے ہندواڑہ کے ماگام علاقہ میں میں منگل کی صبح سیکورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپ میں تین غیرملکی (پاکستانی) جنگجوؤں کو ہلاک کیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT