Wednesday , June 20 2018
Home / سیاسیات / ضمنی انتخابات میں مودی لہر ’بالکلیہ بے اثر‘ : کانگریس

ضمنی انتخابات میں مودی لہر ’بالکلیہ بے اثر‘ : کانگریس

بہار میں سیکولر اتحاد کی کامیابی سے تقسیم کی سیاست مسترد، نتیش کا ردعمل ۔ بی جے پی پر سکتہ طاری

بہار میں سیکولر اتحاد کی کامیابی سے تقسیم کی سیاست مسترد، نتیش کا ردعمل ۔ بی جے پی پر سکتہ طاری
نئی دہلی ؍ پٹنہ ۔ 25 ۔ اگست (سیاست ڈاٹ کام) بہار میں آر جے ڈی ۔ جے ڈی (یو) ۔ کانگریس اتحاد کی 6-4 کی فتح سے بلند حوصلہ کانگریس نے آج کہا کہ ان نتائج نے ملک میں نریندری مودی لہر کے بی جے پی کے دعوے کو ’’بالکلیہ بے اثر‘‘ کردیا ہے۔ ’’اگرچہ لوک سبھا اور اسمبلی چناؤ میں مختلف عوامل کام کرتے ہیں لیکن بی جے پی ایسا ظاہر کرنے کی کوشش کررہی ہیکہ سارا ملک مودی کے رنگ میں رنگا ہوا ہے اور یہ کہ سارے ملک میں ووٹ مودی کے نام پر حتیٰ کہ اسمبلی اور پنچایت چناؤ میں بھی اسی طرح ڈالے جائیں گے۔ آج کے انتخابی نتائج کے ذریعہ اس ملک کے عوام نے بی جے پی کے ’مودی نام کیولم‘ (صرف مودی) کے نعرے کی نفی کردی ہے اور اس نام کے ساتھ جھوٹی لہر پیش کرنے کی کوشش کو بھی ناکام بنادیا ہے‘‘ پارٹی ترجمان شکیل احمد نے اے آئی سی سی بریفنگ میں یہ بات کہی۔ انہوں نے اترکھنڈ اسمبلی کے ضمنی انتخاب میں بی جے پی کے مقابل کانگریس کی 3-0 کی کچھ عرصہ قبل جیت کا تذکرہ کیا اور اس پہاڑی ریاست میں 11 ضلع پریشد صدرنشین کے انتخابات کے منجملہ 9 میں کانگریس کی کامیابی کو بھی اسی سمت کی مثالیں قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ نتائج مخالف بی جے پی پارٹیوں کیلئے مثبت تبدیلی ہے۔ دریں اثناء چار ریاستوں میں منعقدہ ضمنی انتخابات کے نتائج نے بی جے پی کو سکتے میں ڈال دیا ہے، جہاں زیادہ تر نشستوں پر بی جے پی کے امیدواروں کو شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ اطلاعات کے مطابق بہار میں 10 اسمبلی نشستیں ، مدھیہ پردیش میں 3 ، کرناٹک میں 3 اور پنجاب میں 2 نشستوں پر منعقدہ ضمنی انتخابات کے نتائج کے مطابق بہار میں لالو یادو ، نتیش کمار اور کانگریس اتحاد نے 10 نشستوں میں سے 6 پر کامیابی حاصل کرلی ہے جبکہ لوک سبھا انتخابات میں زبردست کامیابی حاصل کرنے والی پارٹی بی جے پی کو محض 4 نشستیں ہی مل پائی ہیں۔ سیاسی تجزیہ نگاروں کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی کا جادو بتدریج ماند پڑنے لگا ہے۔ مرکز میں این ڈی اے حکومت بننے کے بعد ان ضمنی انتخابات کو مودی کیلئے امتحان سمجھا جارہا تھا اور اس ضمنی انتخابات کو بہار میں آئندہ سال ہونے والے اسمبلی انتخابات کیلئے سیمی فائنل کے طور پر دیکھا جارہا تھا ۔ دوسری طرف عظیم اتحاد کی اس کامیابی پر نتیش کمار نے ریاست کے عوام کو مبارکباد دی ہے اور کہا کہ بہار کے لوگوں نے تقسیم کی سیاست کو مسترد کردیا ہے۔ دوسری طرف بی جے پی لیڈر شاہنواز حسین نے کہا کہ امید کے مطابق ہم نشستیں حاصل کرنے میں ناکام ہوگئے ہیں۔ ریاست کے ضمنی انتخابات کے نتائج اپنے حق میں آنے کے بعد آر جے ڈی کے کارکنوں میں زبردست جوش و خروش دیکھا جارہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT