Monday , December 18 2017
Home / دنیا / طالبان کی جنوبی افغانستان میں پیشقدمی

طالبان کی جنوبی افغانستان میں پیشقدمی

قندھار ۔10اگسٹ ۔(سیاست ڈاٹ کام) افغان دستوں کو کلیدی جنوبی صوبۂ ہلمند کے دارالحکومت میں تعینات کیا جارہا ہے کیونکہ آس پاس کے علاقوں میں طالبان کے ساتھ شدید لڑائی کے درمیان حالات کشیدہ ہوگئے ہیںاور ایسے اندیشے پیدا ہوگئے ہیں کہ یہ شہر چند یوم میں شورش پسندوں کے ہاتھوں میں پڑسکتا ہے ۔ ہلمند کی صوبائی کونسل کے سربراہ کریم عطال کے مطابق طالبان جنگجوؤں نے لشکرگاہ کو گھیر لیا ہے ۔ آرمی اور پولیس یونٹوں کو اب متحرک کردیا گیا ہے ۔ علاوہ ازیں نئی فورسیس کو بھی شہر کی سمت بھیجا جارہا ہے ۔ لشکرگاہ میں انٹرنیشنل میڈیکل چیاریٹی والوں نے اپنا اسٹاف گھٹاکر ہنگامی خدمات تک محدود کردیا ہے ۔ اس چیاریٹی کا شہر میں 300 بستروں والا اسپتال ہے اور عام طورپر 25 انٹرنیشنل اسٹاف کام کرتے ہیں۔ ہلمند کابل حکومت اور طالبان دونوں کیلئے جنگی نقطہ نظر سے اہم صوبہ ہے ۔ طالبان کی شورش پسند سرگرمیاں اپنے 15 ویں سال میں داخل ہوگئی ہیں ۔ ان کی سرگرمیوں کیلئے فنڈس افیون کی پیداوار سے حاصل ہوتے ہیں جو دنیا بھر میں زیادہ تر ہیروئین کیلئے خام مال ہوتا ہے ۔ جنوبی افغانستان کو طالبان کے ہیڈکوارٹر کا موقف حاصل ہے ۔ طالبان کی حکمرانی میں انھوں نے پڑوسی قندھار صوبہ کو انتہاپسند سرگرمیوں کا مرکز بنایا تھا۔

TOPPOPULARRECENT