Wednesday , August 15 2018
Home / ہندوستان / طلاقِ ثلاثہ انقلابی قانون قدامت پرستوں کی مخالفت ناکام: روی شنکر پرساد

طلاقِ ثلاثہ انقلابی قانون قدامت پرستوں کی مخالفت ناکام: روی شنکر پرساد

نئی دہلی ۔ 8 جنوری ۔(سیاست ڈاٹ کام) انقلابی قوانین جو عوام کی فلاح و بہبود کیلئے بنائے جائیں قدامت پرست اُن کی مخالفت کرتے ہیں ، لیکن آخرکار اُنھیں ناکامی ہوتی ہے ۔ مرکزی وزیر قانون روی شنکر پرساد نے آج طلاقِ ثلاثہ مسودہ قانون کی مخآلفت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے یہ تبصرہ کیا ۔ انھوں نے کہاکہ تاریخ اس قسم کی مثالوں سے بھری پڑی ہے لیکن ہر وقت مخالفت کرنے والوں کو ناکامی کا منہ دیکھنا پڑا ۔ اپنے مسلسل ٹوئیٹر پیغامات میں پرساد نے کہاکہ جس مسلم خاتون نے بھی اُن سے ملاقات کی ، اُس نے درخواست کی کہ طلاقِ ثلاثہ کے خلاف ایک سخت تعزیری قانون منظور کیاجائے ۔ کئی بڑے اسلامی ممالک نے اس رواج کو ترک کردیا ہے ۔ آخر ہندوستان جیسے سیکولر ملک میں اسے کیوں برخاست نہیں کیا جاسکتا ؟ پرساد نے کہاکہ طلاقِ ثلاثہ جیسے انقلابی قوانین عوام کی بہبود کے لئے بنائے جاتے ہیں۔ قدامت پرست ان کی مخالفت کرتے ہیں لیکن آخرکارناکام رہتے ہیں ۔ انھوں نے کہا کہ 2017 ء میں طلاقِ ثلاثہ کے 300 مقدمہ درج کئے گئے تھے ۔

TOPPOPULARRECENT