Sunday , January 21 2018
Home / اضلاع کی خبریں / طلباء کو غیر اخلاقی سرگرمیوں سے اجنتاب کا مشورہ

طلباء کو غیر اخلاقی سرگرمیوں سے اجنتاب کا مشورہ

بھینسہ7 مارچ (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)طلباء غیر اخلاقی سرگرمیوں سے اجتناب کرتے ہوئے ملک اور سماج کی تعمیراتی کاموں میںحصہ لے کر ملک اور قوم کی ترقی میں اہم رول ادا کریں۔سماج کی تعمیر میںاپنے علم اور صلاحیتوں کے ذریعہ مستقبل تابناک بنانے کیلئے سنجیدہ ہوجائیں۔کالج کا دور بہت ہی خوبصور ت ہوتا ہے اس دور کو اپنے ملک اور قوم کی مستقبل کی ترقی

بھینسہ7 مارچ (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)طلباء غیر اخلاقی سرگرمیوں سے اجتناب کرتے ہوئے ملک اور سماج کی تعمیراتی کاموں میںحصہ لے کر ملک اور قوم کی ترقی میں اہم رول ادا کریں۔سماج کی تعمیر میںاپنے علم اور صلاحیتوں کے ذریعہ مستقبل تابناک بنانے کیلئے سنجیدہ ہوجائیں۔کالج کا دور بہت ہی خوبصور ت ہوتا ہے اس دور کو اپنے ملک اور قوم کی مستقبل کی ترقی کیلئے استعمال کریںاور علم کے زیور سے آراستہ ہوکر عوام کی خدمات کیلئے آگے آئیں ۔ان خیالات کااظہاررکن اسمبلی مدہول مسز ریوتی وینو گوپال چاری گورنمنٹ جونیر کالج بھینسہ کالج میں منعقدہ تقریب کو مخاطب کرنے کے دوران کیا ۔ بھینسہ گورنمنٹ جونیر کالج اسپورٹس ڈے تقریب کا انعقاد کیا گیا اس پروگرام میں اعجاز احمد خان سابقہ نائب صدرنشین بلدیہ بھینسہ ،محمد نورالدین صدر مدرس گورنمنٹ ہائی اسکول بھینسہ ،فرخندہ علی خان لیکچرر، عبدالحفیظ لیکچرر کے علاوہ دیگر ذمہ داراں کالج اور طلباء کی کثیر تعداد موجود تھی ،اس تقریب کا مخاطب کرتے ہوئے ڈاکٹر محمد عبدالخالق پرنسپل گورنمنٹ جونیر کالج بھینسہ نے کالج کی سالانہ رپورٹ اور مسائل سے ذمہ داران کو واقف کروایا۔دوران خطاب ریوتی میڈم نے کہا کہ کالج دور طلباء کیلئے بہت ہی اہمیت کا حامل ہوتا ہے ۔اور اس دور سے طلباء اپنا مستقبل سنوارتے ہیں اگر اس دور کا صحیح استفادہ نہیں کیا گیا تو وقت گذاری کے علاہ کچھ اور حاصل نہیںہوگا ۔ضرورت اس بات کی ہے کہ ہم اس کے حصول کیلئے سنجیدگی کے ساتھ اپنے وقت کا استعمال کرنا چاہئے ۔تاکہ آنے والے مستقبل میں کسی قسم کی مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے اور نہ ہی پچھتاوا ہو۔انہوں نے کہا کہ علم کے ذریعہ ہی ہم اپنے ملک اور قوم ہی نہیں بلکہ اپنا اور اپنے گائوں کا نام روشن کرسکتے ہیں ۔ اس کے علاوہ دیگر ذمہ داران جن میں محمد نور الدین ،اعجاز احمد خان ،منہاج الحق لکچرر کے علاوہ دیگرنے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ طلباء تعلیم کے ساتھ ساتھ سماجی خدمات کا جذبہ بھی پیدا کریں موجود صورتحال میں سماج مختلف مسائل سے دوچار ہوتا جارہاہے بلخصوص مواضعات کی عوام ایسے معمولی مسائل مین الجھ کر رہے جارہی ہے اس لئے تعلیم یافتہ نوجوان اپنے علم کا اصل حق ادا کرنا ہے تو سماج کی خدمات کو بھی اپنے مقصد میں شامل کرلیں انہوں نے کہا کہ حصول علم کا مقصد علم حاصل کرناہی نہیں بلکہ اسی علم کے زریعہ سماج میں موجود مسائل کی یکسوئی کی جانی چاہئے اس لئے طلباء اپنے قریبی ماحول کو دیکھ کر اس ماحول پاک بنانے کیلئے سنجیدہ ہوجائیں کیو نکہ انسان ایک دوسرے کے ساتھ اپنا تعاون بنائے رکھتا ہے تو وہا ں انسانیت کو بھی فروغ حاصل ہوتا ہے اور موجودہ ماحول اس بات کا مطالبہ کرتاہے کہ انسان اپنے اندر سماجی خدمات کا جذبہ پید اکریں اور انسانیت کو فروغ دینے کے علاوہ بے بس اور مجبور افراد کیلئے رحت کا کام کریں کیو نکہ اس کے زریعہ ہی انسان کو سکون حاصل ہوتا ہے اس موقع پر طلباء وطالبات کو انعامات سے نوازا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT