Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / طلباء کی نمائندگی کو متعلقہ وزارت سے رجوع کیا، دتاتریہ کی وضاحت

طلباء کی نمائندگی کو متعلقہ وزارت سے رجوع کیا، دتاتریہ کی وضاحت

حیدرآباد۔/20جنوری، ( سیاست نیوز) مرکزی وزیر بنڈارودتاتریہ نے ان الزامات کو مسترد کردیا کہ وزارت فروغ انسانی وسائل کو ان کے بھیجے گئے مکتوب کی وجہ سے دلت اسکالر کو معطل کیا گیا تھا جس نے بعد میں خودکشی کرلی۔ انہوں نے وضاحت کی کہ اے بی وی پی نے ان سے جو نمائندگی کی اسے صرف متعلقہ وزارت سے رجوع کیا گیا۔ روہت ویمولا ان پانچ طلباء میں ایک تھا جسے حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی میں ہاسٹل اور دیگر سہولیات تک رسائی روک دی گئی تھی۔ دتاتریہ نے کہا کہ مرکزی وزیر ہونے کے ساتھ ساتھ وہ سکندرآباد کے منتخبہ ایم پی بھی ہیں۔1980کے دہے میں سیاست میں داخلہ کے بعد سے وہ ہمیشہ سماج کے تمام طبقات سے رابطہ برقرار رکھے ہوئے ہیں۔ عام آدمی سے نمائندگی وصول کرکے انہیں متعلقہ وزارتوں تک پہنچانا وہ بحیثیت منتخبہ نمائندہ اپنی ذمہ داری سمجھتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ کوئی بھی طلباء گروپ اگر ان سے نمائندگی کرے تو یہ اسی انداز میں متعلقہ وزارت سے رجوع کرتے ہیں اور ان کا رول محدود ہے۔ انہوں نے توقع ظاہر کی کہ اس وضاحت کے بعد مسئلہ کی یکسوئی ہوجائے گی۔

TOPPOPULARRECENT