Wednesday , November 22 2017
Home / شہر کی خبریں / طلبہ کی کردار سازی اقلیتی اداروں کی ذمہ داری : ڈاکٹر اسلم پرویز

طلبہ کی کردار سازی اقلیتی اداروں کی ذمہ داری : ڈاکٹر اسلم پرویز

حیدرآباد ۔ 13 ۔ جنوری : ( پریس نوٹ ) : طلبہ کی کردار سازی اقلیتی اداروں کی ایک بڑی ذمہ داری ہے۔ ایک شہری کی حیثیت سے اساتذہ اس سلسلے میں اہم رول ادا کرسکتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار 11جنوری کو مولانا آزاد نیشنل اُردو یونیورسٹی کے یو جی سی ہیومن ریسورس ڈیولپمنٹ سنٹر میں منعقدہ’’ اقلیتی اداروں میں لیڈر شپ‘‘ کے موضوع پر دو روزہ تربیتی پروگرام کے افتتاحی اجلاس میں وائس چانسلر ڈاکٹر محمد اسلم پرویز نے کیا۔ انہوں نے اقلیتی اداروں کے لیڈرشپ پر کہا کہ یہ اساتذہ کی ذمہ داری ہے کہ وہ ایک معزز شہری کی حیثیت سے کردار سازی کی ترغیب میں اپنا رول ادا کریں۔ واضح رہے کہ حکومت ہند نے مدن موہن مالویے نیشنل مشن آن ٹیچرس اینڈ ٹیچنگ کی ایک اسکیم شروع کی ہے۔ اس اسکیم کے تحت علی گڑھ مسلم یونیورسٹی میں سنٹر فار اکیڈیمک لیڈرشپ اینڈ ایجوکیشن مینجمنٹ (CALEM) قائم کیا گیا ہے۔ یہ تربیتی پروگرام دو اور چھ دنوں کے لیے ہوتا ہے جس کا اہتمام مختلف اداروں کے ساتھ مل کر کیا جاتا ہے۔ مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کے یو جی سی ہیومن ریسورس ڈیولپمنٹ سنٹرکو سنٹر فار اکیڈیمک لیڈرشپ اینڈ ایجوکیشن مینجمنٹ‘ علی گڑھ مسلم یونیورسٹی‘ علی گڑھ سے دو پروگرامس حاصل ہوئے ہیں۔ اس ضمن میں 11 اور 12  جنوری کو اردو یونیورسٹی میں دو روزہ تربیتی پروگرام کا اہتمام کیا گیا جس میں ملک کے مختلف اقلیتی اداروں کے اساتذہ اور پرنسپلس نے شرکت کی۔ ریسورس پرسن کے طور پر علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے پروفیسر پرویز طالب ‘ ڈاکٹر شاداب حمید ‘ جامعہ ہدایۃ جے پور کے مولانا فضل الرحمن اور حیدرآباد سے جناب علی یاور نیز نلسار یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر فیضان مصطفی نے شرکت کی۔ اختتامی پروگرام میں پروفیسر اے آر قدوائی نے اپنے خطاب میں اردو یونیورسٹی کے انتظامیہ کو اس طرح کے پروگرام کے انعقاد پر تشکر کا اظہار کیا۔یہ پروگرام کوآرڈینٹر پروفیسر پی فضل الرحمن ‘ ڈین اسکول آف سائنسز مانو کی نگرانی میں منعقد کیا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT