Saturday , November 18 2017
Home / Top Stories / طوفان ارما کی شدت میں ایک درجہ کمی مگر فلوریڈا ہنوز متاثر

طوفان ارما کی شدت میں ایک درجہ کمی مگر فلوریڈا ہنوز متاثر

تیز ہواؤں کی جھکڑ اور سیلابی صورتحال برقرار، درجنوں مکانات سے لوگوں کا تخلیہ ، بچاؤ اور راحت کاری اقدامات جاری
ٹمپا (امریکہ) 11 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) طوفان ’ارما‘ کو ایک ہفتہ گزر چکا لیکن ہنوز اِس کی داخلی علاقوں میں خطرناک پیشرفت جاری ہے جیسا کہ آج یہ فلوریڈا سے ٹکرایا جہاں ہواؤں کے جھکڑ اور سیلابی پانی نے تباہی مچائی۔ حتیٰ کہ بچاؤ کاموں میں مصروف پیشہ ور عملہ کو بھی وہاں پریشانی میں گھرے مکینوں کی مدد میں مشکل پیش آرہی ہے۔ ویسے تو ارما فلوریڈا کے علاقہ میں شدت کے اعتبار سے ایک درجہ کم ہوچکا ہے لیکن اِس کی وجہ سے اب بھی طوفانی ہوائیں چل رہی ہیں۔ اسکے اثرات جارجیا میں بھی محسوس کئے جارہے ہیں جہاں طوفان کا مرکز آج دیر گئے قائم ہونے کا اندیشہ ہے۔ سارے فلوریڈا میں مشکل حالات کے درمیان کئی کمیونٹیز پریشان ہیں اور غیر یقینی صورتحال برقرار ہے کہ تباہی و بربادی کا سلسلہ جانے کب تھمے گا۔ دن میں تو حکام کچھ راحت کاری میں کامیاب ہورہے ہیں لیکن رات میں صورتحال سنگین ہورہی ہے۔ ایمرجنسی حالات میں کام کرنے والوں کو نت نئی دقتوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ ایک معمر مریض کو حفاظت سے محفوظ مقام پر پہنچایا گیا لیکن وہاں پہونچنے تک موسمی صورتحال خراب ہوگئی اور بچاؤ عملے وہاں دو گھنٹے پھنسا رہا تاہم کسی کو جانی نقصان نہیں ہوا۔ اورینج کاؤنٹی جو آرلینڈو سٹی کے بیرون واقع ہے وہاں سے آج زائداز 120 مکانات کا تخلیہ کیا جارہا ہے کیونکہ سیلابی پانی وہاں گھسنا شروع ہوچکا ہے۔ فائر فائٹرس اور نیشنل گارڈ گھر گھر جاکر کشتیوں سے پانی میں محصور خاندانوں کو محفوظ تر مقامات تک پہنچارہے ہیں۔ وہاں سے چند میل دوری کے فاصلے پر 30 دیگر افراد کو بھی منتقل کرنا پڑا۔ تاہم کہیں سے بھی کسی کے زخمی ہونے یا کوئی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی ہے۔ ٹمپا کے مغرب میں ریڈنگٹن شورس میں اٹارنی کارل رابرٹس نے اپنے سترہویں منزل والے قیامگاہ میں رات کافی اضطراب میں گزاری۔ وہ سو نہیں پائے کیونکہ اتوار کی شام سے برقی گل ہوچکی تھی اور اُنھیں سیلاب کی وجہ سے پیدا شدہ بدترین حالات کا بہ نفس نفیس اندازہ ہوا۔ اُنھوں نے ایک ایس ایم ایس میں لکھا کہ طوفانی ہواؤں نے سارے ماحول کو دھلا ڈالا اور رات بھر خوف چھایا رہا جس میں سونا ممکن نہ ہوا۔ جب صبح ہوئی تو اُنھوں نے باہر کا ماحول دیکھا۔ سارے فلوریڈا میں تقریباً 4.5 ملین مکانات اور کاروباری ادارے برقی سے محروم ہے اور متعلقہ عہدیداروں کا کہنا ہے کہ ہر کسی کے لئے برقی بحال کرنے کئی ہفتے درکار ہوں گے۔ جارجیا میں زائداز ایک لاکھ افراد تاریکی میں جی رہے ہیں۔ طوفان ارما کا مرکز ٹمپا کے 105 میل (170 کیلو میٹر) شمال میں واقع تھا۔ جب پیش قیاسی کرنے والوں نے اعلان کیا کہ یہ شدت کے اعتبار سے ایک درجہ گھٹ چکا ہے تاہم اُنھوں نے انتباہ دیا کہ اب بھی اِس کے سبب چلنے والی ہوائیں 110 کیلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے چل رہی ہیں۔ یہ طوفان فلوریڈا میں درجہ 4 کی شدت کے ساتھ آیا تھا اور اُس وقت کم از کم تین کنسٹرکشن کرین اُلٹ گئے۔ گنجان آبادی والے ٹمپا ۔ سینٹ پیٹرس برگ علاقے کے لوگوں کو 1921 ء کے بعد سے بڑے طوفان سے متاثر ہوئے ہیں۔ ٹمپا کے میئر باب بکھان نے کہاکہ خدا کا شکر ہے صورتحال پھر بھی اتنی خراب نہیں جتنی ہوسکتی تھی۔ لیکن اُنھوں نے شہریوں کو چوکنا رہنے کا مشورہ دیا۔

TOPPOPULARRECENT