Tuesday , December 11 2018

طوفان ’’تتلی‘‘ سے آندھراپردیش میں 2,800 کروڑ کے نقصانات

مرکزی حکومت سے فوری امداد جاری کرنے وزیراعظم کو چندرا بابو کا مکتوب
حیدرآباد ۔ 13 اکٹوبر (سیاست نیوز) ریاست آندھراپردیش میں دو دن قبل ’’تتلی طوفان‘‘ کے ذریعہ اضلاع سریکاکلم اور وجیانگرم میں پیش آئے نقصانات کی مکمل تفصیلات پر مبنی ایک مکتوب چیف منسٹر آندھراپردیش مسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے تحریر کرکے وزیراعظم مسٹر نریندر مودی کو روانہ کیا اور اس مکتوب میں اضلاع سریکاکلم اور وجیانگرم میں طوفان تتلی سے زائد از 2,800 کروڑ کے نقصانات پیش آنے کا اظہار کیا ہے اور فی الفور ان اضلاع میں طوفان کے متاثرین کیلئے راحت کاری اقدامات کی انجام دہی کو یقینی بنانے کیلئے کم از کم 1200 کروڑ روپئے ابتدائی نوعیت کی مالی امداد کے طور پر جاری کرنے کا وزیراعظم سے مطالبہ کیا۔ علاوہ ازیں وزیراعظم کو روانہ کردہ مکتوب میں بتایا کہ طوفان تتلی کی تباہ کاریوں کی وجہ سے ان اضلاع میں مکانات، شاہراہوں کو زبردست نقصان پہنچاہے ۔ اس کے علاوہ ہارٹیکلچر کو ہی زائد از ایک ہزار کروڑ کے نقصانات پیش آئے جبکہ دیگر کھڑی فصلوں کی تباہی کے باعث 800 کروڑ روپئے کے نقصانات کا تخمینہ کیا گیا۔ چندرا بابو نائیڈو نے مزید اپنے مکتوب میں وزیراعظم کی توجہ مبذول کرواتے ہوئے بتایا کہ برقی شعبہ کو بھی 500 کروڑ روپئے عمارتوں و شاہراہوں کو 100 کروڑ روپئے، محکمہ پنچایت راج کو 100 کروڑ، فشریز کو 50 کروڑ روپئے رورل واٹر سپلائی کیلئے 100 کروڑ روپئے، محکمہ آبپاشی کو 100 کروڑ روپئے کے نقصانات پیش آنے کا تخمینہ کیا گیا اور فوری راحت کاری کیلئے رقومات جاری کرنے کی خواہش کی۔

TOPPOPULARRECENT