Saturday , December 16 2017
Home / عرب دنیا / طیارہ دہشت گردی کا شکار نہیں ہوا : وزیر ٹرانسپورٹ

طیارہ دہشت گردی کا شکار نہیں ہوا : وزیر ٹرانسپورٹ

سوچی (روس) ۔ 26 ۔ ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) روس کا جو طیارہ حادثہ کا شکار ہوکر سمندر میں تباہ ہوگیا، بچاؤ کاری عملہ اب بھی بحر اسود میں نعشوں کی تلاش کر رہا ہے جبکہ روس میں حادثہ کے بعد ایک روزہ سوگ منایا جارہا ہے ۔ شام جانے والے طیارہ میں حادثہ کے وقت 92 افراد سوار تھے جن میں 60 فیصدافراد کا تعلق بین الاقوامی سطح پر معروف سرخ فوج سے تھا جو شام میں موجود روسی فوجیوں کے لئے نئے سال کے موقع پر تفریحی پروگرام پیش کرنے جارہے تھے۔ تاہم قسمت کو کچھ اور ہی منظور تھا ۔ طیارہ ٹیک آف کے فوری بعد سوچی کے ریسارٹ شہر میں حادثہ کا شکار ہوگیا ۔ اس حادثہ کو قومی سانحہ قرار دیتے ہوئے اب تک 10 نعشیں ماسکو منتقل کی گئی ہیں۔ تحقیقات کرنے والے اب تک حادثہ کی وجوہات معلوم نہیں کرسکے ہیں اور نہ ہی اس سلسلہ میں وہ کسی نتیجہ پر پہنچے ہیں۔ تاہم ٹرانسپورٹ منسٹر میکسم سوکولوف نے کل ایک ٹیلی ویژن بیان کے دوران کہا کہ حکام اس حادثہ کو دہشت گردانہ کارروائی تسلیم کرنے تیار نہیں۔ بہرحال حادثہ کی کئی وجوہات ہوسکتی ہیں جن کا ماہرین تجزیہ کر رہے ہیں جن میں کسی انسانی غلطی یا ایندھن میں کمی کو بھی خارج از امکان قرار نہیں دیا گیا ہے ۔ گزشتہ رات تقریباً 3000 بچاؤ کاری عملہ سمندر کو کھنگالنے میں مصروف رہا تاکہ مزید نعشیں مل سکیں جبکہ طیارہ کے بلیک بکس کی تلاش بھی جاری ہے جس کے ذریعہ طیارہ کے حادثہ سے عین قبل کی کئی بات چیت کے ریکارڈ کی سماعت کرتے ہوئے حادثہ کی وجہ معلوم کی جاسکے۔ 39 بحری جہاز اس وقت تلاشی مہم پر ہیں جو 100 مربع کیلو میٹر کے علاقہ میں نعشوں کی تلاش کر رہے ہیں جب کہ فضائی تلاش کیلئے دیگر چھوٹے طیارے ، ہیلی کاپٹرس اور ڈرونس کی خدمات بھی حاصل کی گئی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT