Tuesday , November 20 2018
Home / جرائم و حادثات / عائشہ میراں عصمت ریزی اور قتل کیس کی دوبارہ تحقیقات کا حکم

عائشہ میراں عصمت ریزی اور قتل کیس کی دوبارہ تحقیقات کا حکم

 

حیدرآباد /19 جنوری ( سیاست نیوز ) آندھراپردیش میں ایک دہا قبل فارمیسی کی طالبہ عائشہ میراں کی عصمت ریزی اور قتل کے کیس کی کی سماعت کرتے ہوئے حیدرآباد ہائی کورٹ نے آج اس کیس کی دوبارہ تحقیقات کا حکم دیا ہے ۔ چیف جسٹس رمیش رنگاناتھن کی زیر قیادت ایک ڈیویژن بینچ نے پولیس کو ہدایت دی کہ وہ 28 اپریل تک اس کیس کی تازہ تحقیقات کرتے ہوئے اپنی رپورٹ عدالت کو پیش کریں ۔ 19 سالہ فارمیسی طالبہ عائشہ میراں کا 27 ڈسمبر 2007 میں وجئے واڑہ کے قریب ایک خانگی وومنس ہاسٹل میں عصمت ریزی کرکے بہیمانہ طریقہ سے قتل کیا گیا تھا ۔ عائشہ میراں کی والدہ شمشاد بیگم نے عدالت کے احکام کا خیرمقدم کیا ۔ گذشتہ سال اگست میں ریاستی حکومت نے خصوصی تحقیقاتی تشکیل دی تھی ۔ عدالت کی نگرانی میں تحقیقات کی جائے گی ۔ اس ٹیم کی قیادت ڈپٹی انسپکٹر جنرل پولیس سی ایچ سریکانت کریں گے ۔ ایس آئی ٹی میں ڈی ایس پی ڈی ہیماوتی اور سری لکشمی کے علاوہ انسپکٹر شہرالنساء بیگم بھی شامل ہیں ۔ عدالت نے ایس آئی ٹی عہدیداروں کو ہدایت دی ہے کہ وہ تحقیقات مکمل ہونے تک کسی بھی عہدیدار کا تبادلہ نہ کریں ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT