Saturday , December 15 2018

عادل آباد میں ٹی آر ایس کو زبردست جھٹکہ

پانچ ارکان بلدیہ کی کانگریس میں شمولیت ‘ جوگو رامنا پر اقلیتوں کو نظرانداز کرنے کا الزام

عادل آباد۔ 25 نومبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) مستقر عادل آباد کے سنٹرل گارڈن میں کانگریس پارٹی کی منعقدہ تقریب کے موقع پر عادل آباد مجلس بلدیہ سے تعلق رکھنے والے ٹی آر ایس پارٹی کے پانچ اراکین نے کانگریس پارٹی میں شمولیت حاصل کرلی ۔سینئر کانگریس قائد سابق ریاستی وزیر مسٹر سی رامچندر ریڈی ‘ کانگریس پارٹی عادل آباد حلقہ اسمبلی امیدوار شریمتی جی سجاتا کانگریس پارٹی ضلع میناریٹی صدر ساجد خان نے ٹی آر ایس پارٹی بلدیہ اراکین جن میں وارڈ نمبر 14 کے شیخ اشفاق ‘ وارڈ نمبر 13 کے ایم وجئے کمار ‘ وارڈ نمبر 4 کے شریمتی پریملا ‘ وارڈ نمبر 11 کے شریمتی اے لکشمی کے علاوہ بی جے پی کے وارڈ نمبر 34 بلدیہ کونسلر ایم کرشنا کو پارٹی کھنڈوا پہناتے ہوئے کانگریس پارٹی میں شامل کرلیا ۔ اس موقع پر سید انصار نے بھی کانگریس پارٹی میں شمولیت اختیار کی ۔ ٹی آر ایس پارٹی کے ناراض بلدیہ اراکین نے کانگریس میں شمولیت حاصل کرنے کے بعد عوام سے مخاطب ہو کر کارگذار ریاستی وزیر مسٹر جوگو رامنا پر الزام عائد کیا کہ وہ میناریٹیز کے ایس ٹی ‘ایس سی ‘ بی سی طبقہ کے مسائل حل کرنے میں ناکام ہوچکے ہیں ۔ قبل ازیں میناریٹی ضلع صدر ساجد خان نے اپنے خطاب میں سی رامچندرریڈی کو اپنا سیاسی رہنما ثابت کرتے ہوئے مسٹر جوگورامنا کے فرزند 8 فرضی ایجنسیوں کے ذریعہ مختلف سرکاری محکمہ جات میں ٹنڈرس حاصل کر کے روپئے بٹورنے کا الزام عائد کیا ۔ مستقر عادل آباد کے Rims دواخانہ کی ابتر حالت کا ذمہ دار مسٹر جوگو رامنا کو قرار دیتے ہوئے کانگریس اراکین پر مختلف مقدمات درج کرنے کا بھی جوگو رامنا پر الزام عائد کیا۔ مسٹر سی رامچندرریڈی نے اپنے خطاب میں ٹی آر ایس حکومت کی ناقص کارکردگی کا تذکرہ کیا اور سرکاری ملازمین کے ساتھ کی جانے والی حکومت کی ناانصافی کے بناء پرسرکاری ملازمین کا مکمل تعاون کانگریس کے ساتھ قرار دیا ۔ امیدوار جی سجاتا نے اپنے خطاب میں عادل حلقہ اسمبلی کی ترقی کے لئے کانگریس کے حق میں ووٹ استعمال کرنے عوام سے خواہش کیا ۔ مسٹر بھارگودیش پانڈے نے اپنے خطاب میں کانگریس گروپ بندیوں سے بالاتر ہو کر متحدہ طور پر عادل آباد حلقہ سے کانگریس امیدوار کو کامیاب بنانے جدوجہد جاری رکھنے کا تذکرہ کیا ۔ اس موقع پر سعید خان ‘ پرویز احمد خالد ‘ بلدیہ کونسلر غوث الدین ‘ شکیل احمد ‘ جابر بھائی ‘ نیر خان ‘ بشیراحمد خان ‘ نور خان ‘ محمد مرتضیٰ ‘ صادق احمد ‘ ڈگمبرراؤ ‘ سنجیوریڈی و دیگر موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT