Monday , June 25 2018
Home / شہر کی خبریں / عازمین حج کو عبادتوں میں مصروف اور صبر و تحمل کا مظاہرہ کرنے کا مشورہ

عازمین حج کو عبادتوں میں مصروف اور صبر و تحمل کا مظاہرہ کرنے کا مشورہ

حیدرآباد۔ 17 ۔ ستمبر (سیاست نیوز) ریاستی حج کمیٹی کے 350 عازمین حج پر مشتمل چوتھا قافلہ آج شام سعودی ایرلائینس کی خصوصی پرواز سے جدہ روانہ ہوا۔ شمس آباد انٹرنیشنل ایرپورٹ کے خصوصی حج ٹرمینل میں اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے عازمین حج سے ملاقات کی اور انتظامات کا جائزہ لیا۔ وہ طیارہ کی پرواز تک ایرپورٹ پر موجود رہے اور ا

حیدرآباد۔ 17 ۔ ستمبر (سیاست نیوز) ریاستی حج کمیٹی کے 350 عازمین حج پر مشتمل چوتھا قافلہ آج شام سعودی ایرلائینس کی خصوصی پرواز سے جدہ روانہ ہوا۔ شمس آباد انٹرنیشنل ایرپورٹ کے خصوصی حج ٹرمینل میں اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے عازمین حج سے ملاقات کی اور انتظامات کا جائزہ لیا۔ وہ طیارہ کی پرواز تک ایرپورٹ پر موجود رہے اور انتظامات کی نگرانی کی۔ قبل ازیں حج ہاؤز نامپلی سے آر ٹی سی کی خصوصی بسوں کے ذریعہ عازمین حج کو ایرپورٹ روانہ کیا گیا۔ محکمہ اقلیتی امور حکومت ہند کے اسٹیٹ کوآرڈینیٹر اعجاز حسین اور اسپیشل آفیسر ایس اے شکور نے جھنڈی دکھاکر بسوں کو روانہ کیا۔ آج کے قافلہ میں عادل آباد کے 53 ، حیدرآباد 94 ، کریم نگر 80 ، کھمم 28 ، محبوب نگر 67 ، میدک 6 ، نلگنڈہ 9 ، نظام آباد 9 اور رنگا ریڈی کے 3 عازمین شامل ہیں۔ اب تک حج کمیٹی کے تین قافلے مکہ مکرمہ پہنچ گئے اور عازمین نے عمرہ کی سعادت حاصل کی۔ عازمین حج کی روانگی سے قبل مولانا مفتی عبدالمغنی مظاہری نے فریضہ حج کی ادائیگی اور زیارت روضہ نبوی صلی اللہ علیہ وسلم کے آداب بیان کئے۔ انہوں نے عازمین حج کو مشورہ دیا کہ وہ اپنا زیادہ سے زیادہ وقت عبادتوں میں صرف کریں اور حج کی سعادت کے بعد اس عزم کے ساتھ ملک واپس ہوں کہ وہ مابقی زندگی سنتوں کے مطابق بسر کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ حج کی قبولیت کی علامت یہی ہے کہ حجاج کرام واپسی کے بعد اپنی زندگی شریعت کے مطابق بسرکریں۔انہوں نے عازمین حج کو ایام حج اور سفر کے دوران صبر و تحمل کا مظاہرہ کرنے کا مشورہ دیا اور کہا کہ اس عبادت میں اللہ تعالیٰ نے بندوں کے امتحان کیلئے مشقت کو شامل رکھا ہے۔ پروفیسر ایس اے شکور نے حکومت کی جانب سے مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں کئے گئے انتظامات سے واقف کرایا۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ سال کے مقابلہ اس مرتبہ مزید بہتر انتظامات کئے گئے ہیں۔

اگزیکیٹیو آفیسر عبدالحمید نے عازمین کو سعودی عرب میں قیام کے دوران ضروری قواعد و شرائط سے واقف کرایا۔ تلبیہہ کی گونج میں عازمین حج کے قافلے حج ہاؤز سے روانہ ہوئے، جہاں سینکڑوں کی تعداد میں رشتہ دار اور دوست احباب وداع کرنے کیلئے آئے تھے۔ کل 18 ستمبر جمعرات کو دو قافلوں کے ذریعہ 700 عازمین روانہ ہوں گے ۔ پہلا قافلہ دوپہر 12.30 بجے اور دوسرا قافلہ رات 8.00 بجے پرواز کرے گا۔ ان قافلوں میں حیدرآباد کے 334 ، محبوب نگر 38 ، میدک 96 ، نلگنڈہ 82 ، نظام آباد 77 ، رنگا ریڈی 53 اور ورنگل کے 25 عازمین روانہ ہوں گے۔ عازمین حج کی روانگی کے موقع پر گزشتہ تین دن کے دوران والینٹرس کی کثرت کے باعث بدنظمی دیکھی جارہی ہے۔ حج کمیٹی کی جانب سے 1000 سے زائد والینٹرس پاسس جاری کئے گئے۔ اس کے علاوہ مقامی سیاسی جماعتوں کے قائدین بھی بڑی تعداد میں حج ہاؤز میں دیکھے جارہے ہیں۔ والینٹرس پر مناسب کنٹرول کی کمی اور مختلف گروپس کی جانب سے اپنے اپنے کارکنوں کے ذریعہ انتظامات کی کوشش کے سبب عازمین حج کو دشواریوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ حج کمیٹی ضروری سرکاری امور کی تکمیل کے مقامات پر والینٹرس کو کنٹرول کرے۔ حج کمیٹی کے باب الداخلہ اور اندرونی حصہ میں بھی غیر متعلقہ افراد کی کثرت عازمین کے لئے زحمت کا باعث بنی ہوئی ہے اور پولیس انتظامات میں دشواری محسوس کر رہی ہے۔ حج ہاؤز کی عمارت میں کئی سرکاری اداروں کے دفتر موجود ہے جن کے ملازمین اور وہاں اپنے مسائل کے سلسلہ میں آنے والے عام شہریوں کو بھی پابندیوں کے سبب مشکلات کا سامنا ہے۔

TOPPOPULARRECENT