Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / عازمین حج کو 2000 روپئے کے نوٹس لیجانے پر کوئی پابندی نہیں

عازمین حج کو 2000 روپئے کے نوٹس لیجانے پر کوئی پابندی نہیں

سنٹرل حج کمیٹی کو ریزرو بینک آف انڈیا کے حوالے سے جاری کردہ بیان سے الجھن
حیدرآباد۔21 جولائی (سیاست نیوز) سعودی عرب نے 2000 روپئے کی ہندوستانی کرنسی کو قبول نہ کرنے سے متعلق اطلاعات کے دوران سنٹرل حج کمیٹی نے ریزرو بینک آف انڈیا کے حوالے سے ایک سرکولر جاری کیا ہے۔ اس سرکولر میں واضح کیا گیا کہ عازمین حج کی جانب سے 2000 روپئے کے کرنسی نوٹ سعودی عرب لیجانے پر کوئی پابندی نہیں ہے۔ چیف ایگزیکٹیو آفیسر محمد شہباز علی نے تمام حج کمیٹیوں کو روانہ کردہ سرکولر میں واضح کیا کہ کوئی بھی قانونی کرنسی نوٹ عازمین حج مقررہ حج کے مطابق سعودی عرب لے جاسکتے ہیں۔ یہ سرکولر ریزرو بینک آف انڈیا سے مشاورت کے بعد جاری کیا۔ 2000 کی کرنسی نوٹس کی سعودی عرب میں قبولیت کے مسئلہ پر سنٹرل حج کمیٹی کا یہ سرکولر مزید الجھن کا سبب بن سکتا ہے کیوں کہ کسٹمس کے حکام کے مطابق سعودی عرب کی حکومت بڑی قدر والے کرنسی نوٹ قبول نہیں کرے گی جن میں 2000 کی نوٹ شامل ہے۔ جبکہ 500 اور 100 روپئے کے کرنسی نوٹ ریال میں تبدیل کیئے جائیں گے۔ کسٹم حکام سے بات چیت کے بعد ہی اسپیشل آفیسر تلنگانہ حج کمیٹی نے عازمین حج کو مشورہ دیا کہ وہ کسی بھی تکلیف سے بچنے کے لیے 2000 کی کرنسی نوٹ اپنے ساتھ نہ رکھیں۔ اب سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ کسٹم حکام کی بات کو درست سمجھا جائے یا پھر سنٹرل حج کمیٹی کے سرکولر کو تسلیم کریں۔ ریزرو بینک آف انڈیا کی وضاحت توقع کے مطابق ہے کیوں کہ یہ ادارہ کسی بھی ملک میں اپنے کرنسی نوٹ کے عدم چلن کا اعتراف نہیں کرسکتا۔ اسے تو کہنا ہی ہوگا کہ دنیا بھر میں ہندوستانی کرنسی قبول کی جائے گی۔ برخلاف اس کے سنٹرل حج کمیٹی کو چاہئے تھا کہ وہ سعودی سفارتخانہ سے اس بارے میں وضاحت طلب کرتی۔ اگر سعودی سفارتی حکام تصدیق کردیں کہ 2000 کی کرنسی نوٹ سعودی عرب میں قابل قبول ہیں تو اس سے عازمین حج کی الجھن دور ہوجائے گی۔ واضح رہے کہ گزشتہ سال سعودی حکام نے عازمین حج سے 1000 کی کرنسی نوٹ قبول نہیں کیا تھا۔ ظاہر ہے کہ جب گزشتہ سال 1000 کی کرنسی قبول نہیں کی تو پھر 2000 کی کرنسی نوٹ پر خطرہ برقرار رہ سکتا ہے۔ سنٹرل حج کمیٹی کو عازمین حج کی الجھن دور کرنے کے لیے سعودی سفارتخانے سے وضاحت طلب کرنی چاہئے۔

TOPPOPULARRECENT