Sunday , April 22 2018
Home / جرائم و حادثات / عاشق کی مدد سے شوہر کا قتل کرنے والی خاتون کو جیل

عاشق کی مدد سے شوہر کا قتل کرنے والی خاتون کو جیل

محمد خواجہ کے قتل میں ملوث عاشق اور 6 افراد بھی گرفتار
حیدرآباد /10 اپریل ( سیاست نیوز ) عاشق کے ساتھ ملکر شوہر کے قتل کی سازش رچنے اور شوہر کا قتل کروانے والی خاتون اور اس کے عاشق بشمول 6 افراد کو صنعت نگر پولیس نے گرفتار کرلیا ۔ جن میں کرایہ کے قاتل بھی پائے جاتے ہیں ۔ عاشق کے اشارے پر شوہر کے قتل کے بعد پولیس میں گمشدگی کی شکایت کرنے والی اس سنگ دل خاتون کو پولیس نے جیل منتقل کردیا ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ 21 جنوری کے دن اس واردات میں 43 سالہ محمد خواجہ کا قتل کردیا گیا تھا ۔ جس کی شناخت 27 جنوری کے دن ہوئی تھی ۔ قتل کے بعد خواجہ کی نعش کو قاتلوں نے ریلوے ٹریک پر لٹا دیا تھا اور اس قتل کو حادثہ رار دینے کی کوشش کی تھی ۔ تاہم ریلوے پولیس نامپلی نے اس کیس کو ابتدائی تحقیقات کے بعد اہم شواہد سے صنعت نگر پولیس کو منتقل کردیا تھا اور پولیس نے اس کیس کی تحقیقات کے بعد 6 افراد بشمول مقتول کی بیوی کو گرفتار کرلیا ۔ ڈپٹی کمشنر آف پولیس بالانگر مسٹر وائی سائی شیکھر نے بتایا کہ 33 سالہ تبریز قریشی ساکن سوراج نگر ، بورا بنڈہ 26 سالہ صالحہ بیگم ساکن سوراج نگر ، بورا بنڈہ 29 سالہ سید مجیب آٹو ڈرائیور ساکن صفدر نگر بورا بنڈہ 23 سالہ ایاز پیشہ سے ویلڈر ساکن راج نگر بورا بنڈہ 40 سالہ مرزا اکبر بیگ ساکن سلطان نگر بورا بنڈہ اور 27 سالہ شیخ ظہیر ساکن سائیٹ III بورا بنڈہ کو گرفتار کرلیا گیا ۔ ملزم نمبر ایک اور دو میں ناجائز تعلقات پائے جاتے تھے اور دونوں آپس میں ایک دوسرے کو پسند کرتے تھے ۔ عاشق سے دوستی اور تعلقات میں شوہر کو رکاوٹ تصور کرنے والی خاتون نے عاشق سے تکلیف بیان کی اور اس نے قتل کا منصوبہ تیار کیا ۔ دونوں نے ملکر ایک سازش رچی اور تبریز نے مجیب سے واقعہ کو بیان کیا اور خواجہ کے قتل کو انجام دینے کیلئے کہا ۔ اس کے عوض تبریز نے مجیب کو 2 لاکھ روپئے حوالے کیا ۔ 20 جنوری کے دن مجیب اور اس کے ساتھیوں نے خواجہ کا تعاقب کیا اور وی وی نگر علاقہ میں پہونچنے کے بعد انہوں نے وزنی پتھر ڈالکر خواجہ کا قتل کیا اور اس کی نعش کو ٹرین کی پٹریوں پر ڈال دیا تاکہ اسے حادثہ قرار دیا جاسکے جس کے بعد دوسرے دن عاشق کی ایما پر صالحہ نے ایس آر نگر پولیس اسٹیشن میں گمشدگی کی شکایت درج کروائی ۔ پولیس کے مطابق یہ سب سوچی سمجھی سازش کا حصہ تھا ۔ پولیس نے ان تمام کو گرفتار کرتے ہوئے عدالتی تحویل میں دے دیا ۔

TOPPOPULARRECENT