Friday , October 19 2018
Home / جرائم و حادثات / عاشق کے دھوکہ کا شکار بے یار و مددگار لڑکی والدین کے حوالے

عاشق کے دھوکہ کا شکار بے یار و مددگار لڑکی والدین کے حوالے

حیدرآباد /18 فروری ( سیاست نیوز ) سکندرآباد ریلوے پولیس نے ایک 19 سالہ لڑکی کو اس کے والدین کے حوالے کردیا جو اپنے عاشق کی دھوکہ کا شکار دو دنوں سے ریلوے اسٹیشن پر بھٹک رہی تھی ۔ جب ریلوے پولیس نے اس لڑکی سے پوچھا تو لڑکی نے بتایا کہ وہ اپنے عاشق کے ا نتظار میں ٹھہری ہے ۔ لڑکی دو دنوں سے اسٹیشن پر موجود تھی اور اپنے عاشق کے آمد کی منتظر تھی

حیدرآباد /18 فروری ( سیاست نیوز ) سکندرآباد ریلوے پولیس نے ایک 19 سالہ لڑکی کو اس کے والدین کے حوالے کردیا جو اپنے عاشق کی دھوکہ کا شکار دو دنوں سے ریلوے اسٹیشن پر بھٹک رہی تھی ۔ جب ریلوے پولیس نے اس لڑکی سے پوچھا تو لڑکی نے بتایا کہ وہ اپنے عاشق کے ا نتظار میں ٹھہری ہے ۔ لڑکی دو دنوں سے اسٹیشن پر موجود تھی اور اپنے عاشق کے آمد کی منتظر تھی جس نے اس سے وعدہ کیا تھا کہ وہ پیسے لیکر واپس آئے گا ۔ تاہم وہ واپس نہیں لوٹا ۔ پولیس ذرائع نے شبہ ظاہر کیا ہے کہ لڑکا اکھیل لڑکی کے خالی ہاتھ لوٹنے سے پریشان ہوگیا اور اس نے فراری اختیار کرلی ۔ وہ لڑکی سے دولت و زیورات کا منتظر تھا لیکن یہ لڑکی خالی ہاتھ پہونچی تھی ۔ ریلوے پولیس سکندرآباد ذرائع کے مطابق 19 سالہ لڑکی تانڈور ضلع رنگاریڈی سے تعلق رکھتی ہے ۔ جو دو دن قبل اپنے گھر سے نکلی تھی اور سکندرآباد اسٹیشن پر دستیاب ہوئی ۔ لڑکی کی جان پہچان 2 سال قبل ورنگل میں واقع ہزار ستون کے مندر میں اکھیل سے ہوئی تھی ۔ اکھیل جو وشاکھاپٹنم علاقہ کا ساکن ہے ۔ دونوں میں فون پر بات چیت جاری تھی اور دوستی عاشقی میں بدل گئی ۔ اکھیل نے لڑکی سے شادی کا وعدہ کیا تھا اور اس نے اتوار کے دن لڑکی کو سکندرآباد ریلوے اسٹیشن پر طلب کیا ۔ جیسے ہی لڑکی آئی اس نے لڑکی کو خالی ہاتھ دیکھ کر بہانے بنانا شروع کردیا اور پیسے لانے کے بہانے وہ لڑکی کو اسٹیشن پر ٹھہراکر اچانک لاپتہ ہوگیا ۔ لڑکی دو دن سے اسٹیشن پر اپنے عاشق کا انتظار کر رہی تھی جو ریلوے پولیس سکندرآباد کو ملی ۔ ریلوے پولیس نے لڑکی سے اسکے والدین کا پتہ لیکر والدین کو طلب کیا اور ان کے حوالے کردیا ۔

TOPPOPULARRECENT