عالمی امن اور سیکوریٹی کی راہ میں دہشت گردی سب سے بڑی رکاوٹ : سشما

باکو ۔ 5 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) وزیرخارجہ ہند سشماسوراج نے آج ایک اہم بیان دیتے ہوئے کہا کہ بین الاقوامی سطح پر قیام امن اور سیکوریٹی کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ دہشت گردی ہے کیونکہ اس سے نہ صرف ہمارے شہری مارے جاتے ہیں بلکہ ہمارے لئے (کسی بھی ملک کیلئے) ترقی کی راہ میں بھی رکاوٹیں پیدا ہوجاتی ہیں کیونکہ دہشت گردی کی وجہ سے ہم ترقی کا اپنا نشانہ پورا نہیں کرپاتے۔ سشماسوراج 18 ویں تحریک ناوابستہ کے اجلاس سے مخاطب تھیں جو وسط مدتی وزارتی اجلاس تھا۔ اپنی بات جاری رکھتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سلامتی کونسل میں اصلاحات متعارف کئے بغیر اقوام متحدہ کیلئے کوئی بھی اصلاحات کارگر ثابت نہیں ہوگی جبکہ ہندوستان عرصہ دراز سے سلامتی کونسل کی اصلاحات کیلئے زور دے رہا ہے۔ اپنی بات دہراتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ترقی کی راہ میں اور قیام امن کیلئے دہشت گردی سب سے بڑی رکاوٹ ہے کیونکہ یہ ہمیں معذور اور ہلاک کردیتے ہیں۔ ہم نے دیکھا ہیکہ دہشت گرد حملوں میں اگر کوئی ہلاک نہیں بھی ہوا ہے تو جسمانی طور پر اسے اتنا نقصان پہنچتا ہے کہ وہ معذور اور مفلوج ہوجاتا ہے۔ آپ بتائیے معذور اور مفلوج افراد سماج کی ترقی میں کیا رول ادا کرسکتے ہیں؟ البتہ کچھ ایسے منفرد معاملات بھی سامنے آتے یہں جہاں معذوری کے باوجود کچھ آہنی ارادوں کے مالک افراد اپنے فرائض بخوبی نبھاتے ہیں۔ بدقسمتی کی بات یہ ہیکہ دہشت گردی کے سدباب کیلئے ہم جتنی باتیں کرتے ہیں، عملی طور کچھ نہیں کرپاتے۔ صرف زبانی باتیں کرنا الگ بات ہے اور اس پر عمل آوری کرنا دوسری بات ہے۔ وزارتی اجلاس کی صدارت بولیورین جمہوریہ ونیزویلا کے وزیرخارجہ جارج اریزا نے کی۔

TOPPOPULARRECENT