Thursday , May 24 2018
Home / شہر کی خبریں / عالمی تلگو کانفرنس کے طرز پر عالمی اردو کانفرنس کی تجویز

عالمی تلگو کانفرنس کے طرز پر عالمی اردو کانفرنس کی تجویز

محکمہ اقلیتی بہبود کو تیاریاں شروع کرنے چیف منسٹر تلنگانہ کی ہدایت
حیدرآباد۔ 14 ڈسمبر (سیاست نیوز) عالمی تلگو کانفرنس کی طرز پر حیدرآباد میں عالمی اردو کانفرنس کے انعقاد کے سلسلہ میں چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو سے منظوری حاصل کرنے کے لیے محکمہ اقلیتی بہبود نے تجاویز تیار کی ہیں۔ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے عالمی اردو کانفرنس کے انعقاد کے سلسلہ میں محکمہ اقلیتی بہبود کو تیاریوں کی ہدایت دی۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں اردو کو دوسری سرکاری زبان کا درجہ دینے والے چیف منسٹر کے سی آر عالمی اردو کانفرنس کی تجویز کو بخوشی منظوری دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ حیدرآباد دنیا بھر میں اردو کے حقیقی مرکز کے طور پر جانا جاتا ہے۔ یوں تو ملک کے دیگر شہروں میں اردو کا رواج رہا لیکن آج اردو کی جگہ ہندی نے جگہ لے لی ہے۔ جبکہ تلنگانہ محبان اردو نے اپنی زبان کا تحفظ کیا ہے۔ مسلمانوں کے علاوہ دیگر طبقات میں اردو کے چاہنے والے موجود ہیں۔ محمود علی نے کہا کہ تلنگانہ حکومت نے اردو زبان کی ترقی و ترویج کے لیے اردو اکیڈیمی کے ذریعہ مختلف اسکیمات کے آغاز کا فیصلہ کیا ہے۔ اردو اکیڈیمی کو مستحکم کرتے ہوئے نہ صرف زبان کا تحفظ کیا جائے گا بلکہ اسے مزید فروغ حاصل ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر خود اردو داں ہیں اور وہ چاہتے ہیں کہ اردو کو تلگو مساوی ترقی حاصل ہو۔ محکمہ اقلیتی بہبود کی جانب سے عالمی اردو کانفرنس کے انعقاد کے سلسلہ میں تجاویز تیار کی جارہی ہیں جو چیف منسٹر کو روانہ کی جائیں گی۔ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل اور سکریٹری ڈائرکٹر اردو اکیڈیمی پروفیسر ایس اے شکور کانفرنس کے مختلف پروگراموں کو قطعیت دے رہے ہیں۔ پروگراموں کی تفصیل کے علاوہ حکومت سے درکار بجٹ کے سلسلہ میں مشاورتی اجلاس منعقد ہوا۔ حکومت نے عالمی تلگو کانفرنس کے لیے 50 کروڑ کا بجٹ مختص کیا ہے اور اردو کانفرنس کے لیے کم سے کم 10 تا 15 کروڑ کے بجٹ کا مطالبہ کیا جائے گا۔ چیف منسٹر نے اقلیتی بہبود سے متعلق حالیہ جائزہ اجلاس میں اردو اکیڈیمی کی موجودہ اسکیمات کی جگہ نئی اسکیمات تیار کرنے کی ہدایت دی اور حکومت کی جانب سے درکار بجٹ کی اجرائی سے اتفاق کیا۔

TOPPOPULARRECENT