Thursday , December 14 2017
Home / Top Stories / عالمی معیشت کے نازک دور کے باوجود ہندوستان کا بہتر مقام

عالمی معیشت کے نازک دور کے باوجود ہندوستان کا بہتر مقام

مالی استحکام اور ترقیاتی کونسل اجلاس میں وزیر فینانس ارون جیٹلی کا ادعا
نئی دہلی۔5جنوری(سیاست ڈاٹ کام) وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے کہا ہے کہ اگرچہ عالمی معیشت کافی نازک دور سے گزر رہی ہے ، اس کے باوجود ہندوستان بہتر مقام پر ہے کیونکہ مجموعی ،اقتصادی اور بنیادی عناصر میں بہتری واقع ہوئی ہے ۔وزیر خزانہ نے کہا کہ حکومت کی جانب سے بے معنی اور غیر موثر معیشت کی غیریقینی صورت حال کو ختم کرنے کیلئے کئے گئے اقدامات اورٹیکس کی چوری کی روک تھا م کی کوششوں سے مجموعی گھریلو پیداوار اور طویل مدتی مالی استحکام کے پہلو پر مثبت اثرات مرتب ہوئے ہیں۔وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے ان خیالات کا اظہار آج یہاں نئی دلی میں مالی استحکام اور ترقیاتی کونسل (ایف ایس ڈی سی ) کی سولہویں میٹنگ کی صدارت کے دوران کیا۔اس موقع پر چیف اقتصادی مشیر نے معیشت کی کیفیت کے موضوع پر ایک پرزنٹیشن پیش کیا۔کونسل نے معیشت کو درپیش چیالینجس اور معاملات پر نظرثانی کی اور یہ بات سامنے آئی کہ آج ہندوستان اپنے مجموعی اقتصادی بنیادی عناصر میں لائی گئی اصلاحات کی بنیاد پر پہلے سے کہیں بہتر مقام پر کھڑ ا ہے ۔کونسل میں یہ بات بھی نمایاں ہوئی کہ حکومت کی جانب سے متوازی معیشت کا سدباب کرنے اور کالا دھن کو ختم کرنے کی جوکوششیں کی گئی ہیں ،ان سے عرصہ دراز میں مجموعی گھریلو پیداوار اورمالی استحکام پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔اس موقع پر ریگولیٹر حضرات نے 18۔2017 کے آئندہ بجٹ کے سلسلے میں اپنی تجاویز اور نظریات پیش کئے ، جن پر کونسل میں گفت وشنید ہوئی۔کونسل نے بینکوں میں این پی اے کیفیت کی موجودہ صورتحال کا بھی جائزہ لیا اور حکومت اور آر بی آئی کے ذریعہ زیر بار اثاثوں سے نمٹنے کیلئے کئے گئے اقدامات پر بھی بات چیت کی اور اس امر کا بھی جائزہ لیا کہ اس سلسلے میں مزید کیا جانا چاہئے ۔

ایف ایس ڈی سی نے حکومت اور ریگولیٹروں کی جانب سے مالی شمولیت / مالی خواندگی کو فروغ دینے کیلئے کئے گئے مختلف النوع اقدامات اور کوششوں پر بھی تبادلہ خیالات کئے گئے اورانہیں مزید تقویت دینے کیلئے مستقبل کے اقدامات کا جائزہ لیا گیا۔آر بی آئی کے گورنر کی قیادت میں ایف ایس ڈی سی ذیلی کمیٹی کی سرگرمیوں کا جائزہ لیا گیا اور ایک مختصررپورٹ ایف ایس ڈی سی کے سامنے پیش کی گئی۔کونسل کی اس سے قبل کی میٹنگوں میں لئے گئے فیصلوں کے سلسلے میں اراکین کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات کا بھی جامع طور پر جائزہ لیا گیا۔کونسل نے فنٹیک ، اعدادی جدید کاری اور سائبر سلامتی سے متعلق موضوعات پر بھی تبادلہ خیال کیا ۔ حکومت اورریگولیٹر کی جانب سے کئے گئے اقدامات کا بھی کونسل نے جائزہ لیا اور درکار مزید اقدامات کے امکانات پر بھی غور کیا گیا۔ایف ایس ڈی سی میٹنگ میں تمام مالی ریگولیٹروں،وزارت خزانہ کے سینئر افسروں اور مالی شعبے کے ریگولیٹروں نے شرکت کی۔آج کی میٹنگ میں آر بی آئی کے گورنر ڈاکٹر ارجت پٹیل ، مالیاتی سکریٹری شری اشوک لواسا ،اقتصادی امور کے محکمے کے سکریٹری ششی کانت داس ،محکمہ مالیات کے سکریٹری ڈاکٹر ہنس مکھ ادھیا ، مالی خدمات کے محکمے کی سکریٹری محترمہ انجلی چب دْگل ، سرمایہ کاری اور سرکاری اثاثوں کے انتظام کے محکمہ کے نیرج کمار ، چیف اقتصادی مشیر ڈاکٹرسبرا منین ، ایس ای بی آئی کے چئیر مین مسٹریوکے سنہا ، آئی آر ڈی اے آئی کے چیئرمین مسٹر ٹی ایس وجین ، پی ایف آر ڈی کے چیئر مین مسٹر ہیمنت جی کانٹریکٹر اور حکومت ہند کے دیگر سینئر افسران اور مالی شعبے کے ریگولیٹر حضرات موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT