Sunday , June 24 2018
Home / سیاسیات / عام آدمی پارٹی ارکان اسمبلی کی لیفٹننٹ گورنر دہلی سے ملاقات

عام آدمی پارٹی ارکان اسمبلی کی لیفٹننٹ گورنر دہلی سے ملاقات

نئی دہلی ۔ 21 ۔ جولائی (سیاست ڈاٹ کام) عام آدمی پارٹی کے 27 ارکان اسمبلی نے اروند کجریوال کی زیر قیادت لیفٹننٹ گورنر دہلی نجیب جنگ سے ملاقات کی اور ان سے کہا کہ دہلی اسمبلی کی تحلیل میں تاخیر کے ذریعہ ارکان اسمبلی کی ’’خرید و فروخت‘‘ کی حوصلہ افزائی ہورہی ہے۔ حکومت دہلی کے سابق وزیر قانون سومناتھ بھارتی نے بعد ازاں ایک پریس کانفرنس س

نئی دہلی ۔ 21 ۔ جولائی (سیاست ڈاٹ کام) عام آدمی پارٹی کے 27 ارکان اسمبلی نے اروند کجریوال کی زیر قیادت لیفٹننٹ گورنر دہلی نجیب جنگ سے ملاقات کی اور ان سے کہا کہ دہلی اسمبلی کی تحلیل میں تاخیر کے ذریعہ ارکان اسمبلی کی ’’خرید و فروخت‘‘ کی حوصلہ افزائی ہورہی ہے۔ حکومت دہلی کے سابق وزیر قانون سومناتھ بھارتی نے بعد ازاں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عام آدمی پارٹی ارکان نے لیفٹننٹ گورنر سے ملاقات کر کے انہیں تازہ ترین سیاسی صورتحال سے اور اسمبلی کی تحلیل میں تاخیر کے نتیجہ میں ارکان اسمبلی کی خرید و فروخت کی حوصلہ افزائی ہونے کے بارے میں واقف کروایا۔ انہوں نے کہا کہ ایسی حکومت کوئی اچھا کام نہیں کرسکے گی ۔ سومناتھ بھارتی نے کہا کہ لیفٹننٹ گورنر نے کہا کہ وہ کانگریس اور بی جے پی دونوں سے بات چیت کریں گے اور جلد ہی اس معاملہ میں صدر جمہوریہ ہند کو رپورٹ روانہ کریں گے ۔ ملاقات کے فوری بعد کجریوال نے ٹوئیٹر پر تحریر کیا کہ لیفٹننٹ گورنر سے تبادلہ خیال بہتر رہا ۔ وہ اب تبادلہ خیال کیلئے بی جے پی کو مدعو کریں گے ۔ بی جے پی کا دعویٰ ہے کہ وہ حکومت تشکیل دے سکتی ہے۔ لیفٹننٹ گورنر ان سے اکثریت ثابت کرنے کی خواہش کریں گے ۔ عام آدمی پارٹی نے کل ہی دعویٰ کیا تھا کہ بی جے پی دہلی میں تازہ انتخابات سے بچنا چاہتی ہے اور کانگریس بھی اس سلسلہ میں خاموشی اختیار کئے ہوئے ہے کہ وہ دہلی اسمبلی کی تحلیل کی تائید میں ہے یا مخالفت میں ؟ انہوں نے کہا کہ ذومعنی بیانات دیئے جارہے ہیں اور بی جے پی دہلی کی تازہ ترین سیاسی صورتحال پر اپنا موقف بار بار برعکس کر رہی ہے۔ اس سے صاف ظاہر ہے کہ وہ تازہ انتخابات سے بچنا اور ’’آیا رام گیا رام ‘‘ کلچر پر انحصار کرنا چاہتی ہے، جس کے خلاف سپریم کورٹ نے جاریہ سال 17 اپریل کو انتباہ دیا تھا۔ دوسری طرف کانگریس کی خاموشی کہ کیا وہ تحریری طور پر لیفٹننٹ گورنر اور سپریم کورٹ کو اطلاع دینا چاہتی ہے کہ اسمبلی تحلیل کردی جائے، اس کی خاموشی سے ثابت ہوتا ہے کہ وہ بالواسطہ طور پر بی جے پی کی آیا رام گیا رام والی سیاست کی تائید کر رہی ہے ۔ عام آدمی پارٹی نے کہا کہ مرکزی حکومت کے دہلی اسمبلی کو معطل حالت میں رکھنے کے فیصلہ کے خلاف سپریم کورٹ میں درخواست پر 17 اپریل کو سپریم کورٹ نے تبصرہ کیا تھا کہ اسمبلی میں آیا رام گیا رام کلچر کی سیاست کو فروغ نہ دیا جائے۔ عام آدمی پارٹی کے سینئر قائد منیش سیسوڈیا نے کہا کہ لیفٹننٹ گورنر کو واضح طور پر کہہ دیا گیا ہے کہ اسمبلی کی تحلیل میں تاخیر سے ارکان اسمبلی کی خرید و فروخت کی حوصلہ افزائی ہوگی۔ عام آدمی پارٹی 14 فروری کو استعفیٰ پیش کرچکی ہے اور اس کے بعد سے ہی اسمبلی معطل حالت میں رکھی گئی ہے۔ عام آدمی پارٹی حکومت نے اسملبی تحلیل کرنے کی سفارش کی تھی۔سیسوڈیا نے کہا کہ لیفٹننٹ گورنر نے تمام سیاسی پارٹیوں بشمول بی جے پی کے ساتھ تبادلہ خیال کے بعد صدر جمہوریہ کو تفصیلی رپورٹ روانہ کرنے کا تیقن دیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT