Thursday , April 19 2018
Home / Top Stories / عام آدمی پارٹی کے 20 ارکان اسمبلی ’’نااہل‘‘ ، صدرجمہوریہ کی بھی توثیق

عام آدمی پارٹی کے 20 ارکان اسمبلی ’’نااہل‘‘ ، صدرجمہوریہ کی بھی توثیق

جمہوریت خطرہ میں ، عام آدمی پارٹی کا ردعمل ، مرکز پر ہراسانی کا کجریوال کا الزام ، نجف گڑھ میں جلسہ عام سے خطاب
نئی دہلی۔ 21 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) صدرجمہوریہ رام ناتھ کووند نے آج الیکشن کمیشن کی سفارشات کو قبول کرلیا۔ الیکشن کمیشن نے دہلی کی حکمرانی پارٹی عام آدمی پارٹی کے 20 ارکان اسمبلی کو ’’نااہل‘‘ قرار دینے کی سفارش کی تھی۔ ان 20 ارکان پر الزام ہے کہ وہ نفع بخش عہدوں پر فائز تھے۔ وزارت قانون کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ میں صدرجمہوریہ کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ الیکشن کمیشن کی جانب سے ظاہر کردہ رائے رائے کے مطابق دہلی لیجسلیٹیو اسمبلی کے 20 ارکان اسمبلی کو نااہل قرار دیا گیا ہے۔ عام آدمی پارٹی کے ارکان اسمبلی کو پارلیمانی سیکریٹریز مقرر کیا گیا تھا اور ان کے تقرر کو ایک درخواست گذار نے نفع بخش عہدے رکھنے کا الزام عائد کیا گیا تھا۔ عام آدمی پارٹی کو شدید دھکہ پہونچاتے ہوئے الیکشن کمیشن نے جمعہ کے دن صدرجمہوریہ سے کہا کہ وہ اس کے 20 ارکان اسمبلی کو نااہل قرار دیں۔ الیکشن کمیشن کی رائے کا جائزہ لیتے ہوئے صدرجمہوریہ نے لکھا ہے کہ میں رام ناتھ کووند صدرجمہوریہ ہند اپنے اختیارات کو بروئے کار لاتے ہوئے دہلی اسمبلی کے مذکورہ 20 ارکان کی رکنیت کو نااہل قرار دی جاتی ہے۔ ان تمام 20 عآپ ارکان اسمبلی نے دہلی ہائیکورٹ میں الیکشن کمیشن کی سفارش کو چیلنج کیا تھا، لیکن جسٹس دیکھا پلانی نے کوئی بھی عبوری احکام جاری کرنے سے انکار کردیا۔ عام آدمی پارٹی کنوینر گوپال رائے نے کہا کہ پارٹی ارکان نے صدرجمہوریہ سے ملاقات کی کوشش کی تھی لیکن ان سے کہا گیا کہ وہ یہاں دستیاب نہیں ہیں۔ ہم کو یقین ہے کہ عدالت سے انصاف ملے گا، ہم ہائیکورٹ اور سپریم کورٹ کے دراز سے کھٹکٹھائیں گے۔ اس واقعہ پر کانگریس نے ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ یہ تبدیلیاں اس لئے رونما ہوئی کیوں کہ عام آدمی پارٹی کو بی جے پی اور الیکشن کمیشن سے مدد مل رہی تھی۔ بی جے پی اور الیکشن کمیشن کے تعاون کی وجہ سے ہی عام آدمی پارٹی نے فیصلہ کرنے میں تین ہفتوں کی تاخیر کی ہے۔ اگر یہ فیصلہ 22 ڈسمبر سے ہوتا تو 20 ارکان اسمبلی کو نااہل قرار دیا جاسکتا اور وہ راجیہ سبھا انتخابات کیلئے ووٹ نہیں دے سکتے تھے۔ رکن بی جے پی نے چال چلتے ہوئے ان ارکان کو نااہل قرار دینے میں تاخیر سے کام لیا تاکہ راجیہ سبھا انتخابات کیلئے ووٹ مل سکیں۔ عام آدمی پارٹی کے سینئر قائد اشوتوش نے صدرجمہوریہ کے حکم نامہ کو جس کے تحت عام آدمی ارکان اسمبلی کو نااہل قرار دینے کی توثیق کی گئی ہے ۔ غیر دستوری اور جمہوریت کیلئے خطرہ قرار دیا ۔ نجف گڑھ کے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کجریوال نے کہا کہ مرکز ہمیں ہر طریقہ سے ہراساں کررہا ہے ۔ انہوں نے میرے دفتر پر سی بی آئی دھاوا کیا ۔ لیکن انہیں 24 گھنٹے کی تلاشی کے بعد صرف 4 مفلر ملے ۔ ہمارے 20 ارکان اسمبلی کو نااہل قرار دیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ جب آدمی صداقت کے راستے پر ہو تو اسے کئی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔ ہمارے ساتھ بھی ایسا ہی ہورہا ہے ۔ انہوں نے بی جے پی کا نام نہیں لیا ۔ تاہم ان کی تنقید کا اشارہ اسی کی طرف تھا ۔

TOPPOPULARRECENT