Thursday , September 20 2018
Home / شہر کی خبریں / عام انتخابات کے پیش نظر اقلیتوں سے حصول تائید کی کوشش

عام انتخابات کے پیش نظر اقلیتوں سے حصول تائید کی کوشش

اقلیتی بجٹ میں 600 تا 800 کروڑ روپئے کے اضافہ پر غور ، 12% تحفظات کی عدم فراہمی پر اقلیتیں ناراض

حیدرآباد۔ 10 جنوری (سیاست نیوز) عام انتخابات کے پیش نظر تلنگانہ حکومت اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کی بھرپور تائید حاصل کرنے کیلئے اقلیتی بجٹ میں مزید 600 تا 800 کروڑ روپئے کا اضافہ کرنے پر سنجیدگی سے غور کررہی ہے۔ واضح رہے کہ ٹی آر ایس نے اپنے انتخابی منشور میں مسلمانوں کے موجودہ 4% تحفظات میں 8% کا اضافہ کرتے ہوئے 12% تحفظات فراہم کرنے کا وعدہ کیا جس سے متاثر ہوکر ٹی آر ایس کو اقتدار حاصل کرنے میں ریاست کے 14% مسلمانوں نے اہم رول ادا کیا۔ مسلمانوں کو وعدے کے مطابق 12% تحفظات فراہم کرنے میں 42 ماہ گذر گئے مگر حکومت مسلمانوں سے کئے گئے وعدوں کو پورا نہ کرسکی۔ سدھیر کمیشن نے تحفظات کے ساتھ کئی تجاویز پیش کی بی سی کمیشن کی سفارشات کے بعد چیف منسٹر کے سی آر نے اسمبلی اور کونسل کا خصوصی اجلاس طلب کرتے ہوئے مسلمانوں کو تعلیم اور ملازمتوں میں 12% تحفظات فراہم کرنے کی قرارداد منظور کرتے ہوئے اس کو مرکز سے رجوع کردیا گیا۔ 12% مسلم تحفظات کی عدم فراہمی سے مسلمانوں میں ناراضگی ہے۔ اس کے علاوہ مسلمانوں کی فلاح و بہبود کیلئے جو وعدے کئے گئے تھے، اس پر بھی کوئی خاص پیشرفت نہیں ہوئی۔ انیس الغرباء یتیم خانہ کی ہمہ منزلہ عمارت صرف سنگ بنیاد تک محدود ہوگئی۔ اسلامک کلچرل سنٹر کا اعلان کیا گیا مگر ابھی تک اس کا سنگ بنیاد بھی نہیں رکھا گیا۔ تلنگانہ کے زائرین کیلئے اجمیر میں رُباط قائم کرنے کے فیصلے پر کوئی عمل آوری نہیں ہوئی۔ ہر سال ریاست میں اقلیتوں کیلئے مختص کردہ بجٹ کبھی 50% بھی خرچ نہیں کیا گیا۔ حکومت کے کئی ایسے وعدے ہیں جس پر ابھی تک عمل آوری نہیں ہوئی جس سے ریاست کے مسلمانوں میں حکومت کے خلاف ناراضگی پائی جاتی ہے۔ حکومت کی جانب سے کرائے جانے والے سروے ٹی آر ایس کیلئے مایوس کن ثابت ہورہے ہیں۔ دوسرے طبقات کے ساتھ اقلیتوں میں بھی حکومت سے ناراضگی پائی جارہی ہے۔ اقلیتوں کی نبض کو بھانپ لینے کے بعد چیف منسٹر تلنگانہ اقلیتی بجٹ کو 1800 تا 2000 کروڑ روپئے تک بڑھانے پر سنجیدگی سے غور کررہے ہیں۔ سیکریٹری اقلیتی بہبود دانا کشور نے بھی جائزہ حاصل کرتے ہی محکمہ اقلیتی بہبود کے تمام اعلیٰ عہدیداروں کا اجلاس طلب کیا اور بجٹ تجاویز حکومت کو روانہ کردی ہے۔ چیف منسٹر تلنگانہ اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کو اعتماد میں لینے کی ہر ممکن کوشش کررہے ہیں۔ بجٹ میں اضافہ کرنے کے ساتھ نئی اسکیمات متعارف کرنے کا بھی سنجیدگی سے جائزہ لیا جارہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT