Wednesday , September 19 2018
Home / Top Stories / عام انتخابات 2019ء میں وارناسی سے مودی کی شکست کی پیش قیاسی

عام انتخابات 2019ء میں وارناسی سے مودی کی شکست کی پیش قیاسی

دوسری طرف ناگپور کی نظریاتی تنظیمیں بی جے پی آر ایس ایس ہیں ۔ان کے نظریات نفرت پھیلانے کا کام کررہے ہیں ۔

ملازمتوں کے معاملے میں چین سے سبق لینے کا مشورہ ‘ صفائی کے سلسلہ میں کرناٹک مرکز کیلئے ایک مثال : راہول

بنگلورو۔8اپریل (سیاست ڈاٹ کام ) 2019ء کے عام انتخابات میں بی جے پی کی کامیابی تو رہی ایک طرف وزیراعظم نریندر مودی ممکن ہے کہ ایک متحدہ اپوزیشن کی صورت میں وارناسی کی نشست پر بھی ناکام رہیں گے ۔ اپوزیشن کے اتحاد کے سلسلہ میں یقین ظاہر کرتے ہوئے صدر کانگریس راہول گاندھی نے کہا کہ مختلف شخصی اور علاقائی امنگوں کے باوجود کئی برسوں میں ہمارا اتحاد ٹوٹتا ہوا نہیں دیکھا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ انتخابات میں انہیں بی جے پی کی کامیابی کی کوئی امید نہیں ہے ‘ حالات دوبارہ معمول پر آجائیں گے ۔ یو پی ‘ بہار ‘ ٹاملناڈو اور مغربی بنگال میں بی جے پی کا کوئی مقام نہیں ہے ۔ راجستھان ‘ چھتیس گڑھ ‘ مدھیہ پردیش ‘ گجرات ‘ ہریانہ اور پنجاب میں انہوں نے کانگریس کے دوبارہ برسراقتدار آنے کی امید ظاہر کی ۔ انہوں نے آر ایس ایس پرالزام عائدکیا کہ وہ نئی نسل کے غصہ اور نفرت کا شکار بن گئی ہے ۔ یو پی میں بی جے پی کی حالت مضحکہ خیز ہے ۔ گورکھپور اور پھولپور لوک سبھا نشستوں پر سماج وادی پارٹی اور بی ایس پی کے اتحاد نے بی جے پی کو دونوں نشستوں پر شکست دے دی ۔ صدر کانگریس نے آج کہا کہ حکومت کو نوجوانوں میں اعتماد بحال کرنا چاہیئے اور ملازمتیں فراہم کرنے کے سلسلہ میں چین سے سبق حاصل کرنا چاہیئے ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان آئندہ 30سال تک چین سے سماجی شعبوں میں مسابقت کرنا چاہتا ہے لیکن مرکزی حکومت نے ملازمتوں کی فراہمی کے سلسلہ میں چین کے ساتھ مسابقت نہیں کی ۔ انہوں نے صفائی کارکنوں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ان کی پارٹی اگر مرکز میں برسراقتدار آجائے تو کرناٹک سے سبق حاصل کرے گی کہ صفائی کارکنوں کو کس طرح ایوارڈ دیا جاسکتا ہے ۔ راہول گاندھی نے اپنے انتخابی دورہ کرناٹک کے چھٹویں مرحلہ میں صفائی کارکنوں کے ساتھ تبادلہ خیال کیا ۔ انہوں نے کہا کہ وہ یہ بھی سمجھتے ہیں کہ انہیں ایک مختلف نظریہ اور نظام بڑی اور چھوٹی صنعتوں کیلئے پیش کرنا ہوگا ۔ ایک اور سوال کے جواب میں راہول گاندھی نے کہا کہ کانگریس ایک قومی انتخابی منشور آئندہ چند ماہ میں جاری کرے گی ۔

 

 

کرناٹک میں کانگریس کی لہر
صدر کانگریس راہول گاندھی نے آج زور دے کر کہا کہ کرناٹک میں کانگریس کی لہر دکھائی دے رہی ہے ۔ عوام کا موڈ ان کی پارٹی کے حق میں نمایاں دکھائی دے رہا ہے ۔ انہوں نے اپنی یاترا کے چھٹویں مرحلے کو مکمل کرتے ہوئے کہا کہ یہ انتخابات سارے ملک کیلئے موافق کانگریس ثابت ہوں گے ۔ /12 مئی کو اسمبلی انتخابات کے نتائج میں کانگریس کوہی بھاری اکثریت سے کامیابی ملے گی ۔ کانگریس پارٹی کے کارکنوں میں بھی جوش و خروش پایا جاتا ہے ۔ یہ انتخابات دو نظریات کے درمیان کی لڑائی ہے ۔ بنگلور میں کانگریس ورکرس پارٹی کو مضبوط بنارہے ہیں ۔

 

TOPPOPULARRECENT