Tuesday , June 19 2018
Home / سیاسیات / عام آدمی پارٹی پر ووٹروں کا بھروسہ برقرار

عام آدمی پارٹی پر ووٹروں کا بھروسہ برقرار

چیف منسٹر کجریوال کا استعفیٰ عوام کیلئے مایوس کن رہا لیکن پارٹی سے رابطہ نہیں ٹوٹا:راکھی برلا

چیف منسٹر کجریوال کا استعفیٰ عوام کیلئے مایوس کن رہا لیکن پارٹی سے رابطہ نہیں ٹوٹا:راکھی برلا
نئی دہلی 5 فروری (سیاست ڈاٹ کام) دہلی کی سابق وزیر اور منگول پوری اسمبلی حلقہ سے عام آدمی پارٹی امیدوار راکھی برلا کا احساس ہے کہ عوام کو اروند کجریوال کے چیف منسٹر کی حیثیت سے استعفے سے مایوسی ہوئی لیکن اُنھوں نے اِس پارٹی کے ساتھ ناطہ نہیں توڑا ہے اور اِسے ہفتہ کو مقررہ چناؤ میں واضح فاتح بنائیں گے۔ اِس پارٹی کے نہایت نمایاں چہروں میں شامل راکھی جنھوں نے 2013 ء کے چناؤ میں اُس وقت کے وزیر راجکمار چوہان کو شکست دی تھی، اُنھوں نے کہاکہ عوام اِس پارٹی کے بعض فیصلوں کے ناقد رہے ہیں لیکن اُنھوں نے اِس پر اپنا بھروسہ نہیں کھویا ہے۔ راکھی دہلی حکومت میں سب سے کم عمر وزیر بنی ہیں جب انھیں 28 ڈسمبر 2013 ء کو بعمر 26 سال کابینی وزیر کی حیثیت سے حلف دلایا گیا تھا۔ اُنھوں نے کہاکہ عوام ظاہر ہے کجریوال کے استعفے کے فیصلہ سے مایوس ہوئے لیکن اُنھیں صرف کچھ دُکھ ہوا، یہ رشتے ٹوٹنا نہیں۔ اگرچہ اُنھوں نے ہم پر تنقید کی ہے لیکن اُن کا ہم پر زبردست بھروسہ برقرار ہے۔ راکھی برلا جو غریب فیملی سے تعلق رکھتی ہیں۔ اُن کا کہنا ہے کہ اُنھیں شمال مغربی دہلی کے منگول پوری حلقہ پر اپنا قبضہ برقرار رکھنے کی کوشش میں فنڈس کی قلت کا سامنا ہورہا ہے۔ اُن کے انتخابی حلفنامہ کے مطابق اُن کے اثاثہ جات 2013 ء میں 51,150 روپئے سے گھٹ کر 18,500 روپئے ہوگئے ہیں۔ اُنھوں نے کہا، ’’سب سے بڑا چیلنج جس کا مجھے سامنا ہورہا ہے پیسے کی طاقت کا فقدان ہے۔ میرے پاس انتخابات لڑنے کے لئے درکار رقم تک نہیں ہے۔

TOPPOPULARRECENT