عبدالرحیم کا میٹھا کاروبار

’ عام آدمی کی خاص بات ‘ عبدالرحیم کا میٹھا کاروبار ایمان نے تجارت میں برکت ڈالدی ، سارے خاندان کا تعاون

’ عام آدمی کی خاص بات ‘
عبدالرحیم کا میٹھا کاروبار
ایمان نے تجارت میں برکت ڈالدی ، سارے خاندان کا تعاون
حیدرآباد ۔ 10 ۔ جون : ( سیاست نیوز ) : میڈیا میں جب کسی شخص کا انٹرویو دیکھا جاتا ہے تو وہ شخص کوئی وی آئی پی ہوتا ہے یا پھر اس فرد کا تعلق کسی امیر ترین گھرانے سے ہوتا ہے یا پھر وہ کوئی کامیاب بزنس مین ہوتاہے اور بسا اوقات کوئی غیر معمولی کارنامہ انجام دینے والا شخص شہ سرخیوں میں جگہ بنانے میں کامیاب ہوتاہے ۔ ہمارے اطراف کئی ایسی غریب اور عام شخصیتیں ہوتی ہیں جو کہ بذات خود کسی وی آئی پی یا کسی غیر معمولی کارنامہ انجام دینے والوں سے کم نہیں ہوتے ، ان کی محنتیں ، کامیابی اور طرز زندگی ہزاروں افراد کے لیے ایک مثال ہوتی ہے ۔ روزنامہ سیاست نے ایک ایسی پہل کی ہے جس کے ذریعہ ہمارے اطراف موجود غیر معمولی صلاحیتوں کے حامل ، محنتی اور کامیاب افراد کا تعارف کیا جائے کیوں کہ انکی محنتیں اور طرز زندگی دوسروں کے لیے ایک مثال ہوتی ہیں اس پہل کی ابتدائی کڑی جلیبی والے محمد عبدالرحیم ہیں جو کہ ایمانداری ، سخت محنت اور اسلام قبول کرنے کے بعد فٹ پاتھ کے کاروباری سے ترقی کرتے ہوئے آج اپنے علاقے کے کامیاب ترین تاجروں میں شمار کئے جانے لگے ہیں ۔ قارئین آج ہم آپ کو 50 سالہ محمد عبدالرحیم سے ملاقات کروا رہے ہیں جنہوں نے 30 برس قبل اسلام قبول کیا اور مسلسل سخت محنت اور ایمانداری کے ساتھ تجارت کرتے ہوئے ایسی ترقی حاصل کی ہے جو نہ صرف دوسروں کے لیے مثال ہے بلکہ قابل رشک بھی ہے کیوں کہ ان کی زندگی سے سبق حاصل کرتے ہوئے کئی افراد ترقی کی منازل حاصل کرسکتے ہیں ۔ محمد عبدالرحیم سے جب ملاقات کی تو وہ گاہکوں کی کثیر تعداد میں اور ان کی مانگ کو پورا کرنے میں اس طرح مصروف تھے کہ انہیں ہم سے بات کرنے کے لیے چند لمحے نکالنا بھی انتہائی مشکل ہورہا تھا ۔ محمد عبدالرحیم گزشتہ 26 برس سے مسجد حکیم میر وزیر علی ( چندو لال بارہ دری ) کے فٹ پاتھ پر جلیبی کا کاروبار کررہے ہیں ۔ نمائندہ سیاست سے گفتگو کرتے ہوئے محمد عبدالرحیم نے کہا کہ اسلام قبول کرنے کے بعد ان کی زندگی میں انقلابی تبدیلی آئی ہے اور میں جب سدا شیو سے محمد عبدالرحیم بنا تو نہ صرف آخرت کے ہمیشہ کے نقصان سے بچ گیا بلکہ اسلام کی برکت کی وجہ سے میری دنیا بھی بدل گئی ۔ کاروبار کے متعلق محمد عبدالرحیم کا کہنا ہے کہ جلیبی کا کاروبار شام 5 بجے سے رات 11 بجے تک چلتا ہے اور اس کاروبار میں ان کے علاوہ ان کے افراد خاندان بیوی ، بیٹے اور بیٹیاں سبھی ان کا تعاون کرتے ہیں ۔ 26 سال سے جلیبی کے کامیاب کاروبار کے تاجر محمد عبدالرحیم نے یہ بھی کہا کہ چونکہ جلیبی کا کاروبار صرف شام کے اوقات ہی میں ہوتاہے ۔ اور محنت میری فطرت میں ہے اور صبح کے خالی اوقات کی بے چینی نے مجھے صبح کچھ کاروبار کرنے کی سمت مائل کیا ۔ لہذا 8 برس قبل میں نے صبح کے اوقات میں بھی کاروبار کی غرض سے اڈلی دوسہ کا کاروبار بھی شروع کیا جو کہ آج کامیاب ترین تجارت میں تبدیل ہوچکا ہے ۔ اللہ رب العزت چونکہ صبح کے اوقات رزق کی تقسیم کرتا ہے لہذا صبح کے اوقات میں محمد عبدالرحیم کی کاروبار کی نیت نے چند برس میں ہی غیر معمولی نتائج فراہم کردئیے ہیں ۔ کاروبار کی ترقی کے متعلق محمد عبدالرحیم نے کہا کہ کاروبار میں ان کے 2 بیٹے ان کا ساتھ دیتے ہیں لیکن اس کے باوجود انہیں دیگر افراد کو بھی ملازمت پر رکھنا پڑا ہے ۔ چندو لال بارہ دری ، فتح دروازہ اور دودھ باولی علاقوں کے کامیاب ترین تاجروں میں شمار ہونے والے عبدالرحیم نے کہا کہ ان کے صبح و شام کے کاروبار میں ان کی بیوی ، بیٹیاں اور بیٹے مکمل تعاون کرتے ہیں جب کہ ان کی اولاد دنیوی اور دین کی تعلیم کے حصول کے ساتھ کاروبار میں والد کا پورا پورا تعاون کرتی ہیں ۔ محمد عبدالرحیم نے اپنی دو بڑی بیٹیوں کی شادیوں کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ اسلام کی برکت کی وجہ ان کی بیٹیوں کی شادیاں جہیز کی لعنت ، جوڑے گھوڑے کی رسم و رواج کے بغیر انتہائی آسانی کے ساتھ انجام پا چکی ہیں ۔ بیٹیاں بہترین گھرانوں میں بیاہی گئی ہیں جو دراصل اسلام کے دامن میں پناہ لینے کی برکات ہیں ۔ محمد عبدالرحیم کے متعلق ان کے محلے والوں نے بھی کافی اچھے خیالات کا اظہار کیا ہے کیوں کہ محلے والوں کا ماننا ہے اخلاق کے اعتبار سے بہتر اور خاموش مزاج کے محمد عبدالرحیم جو اپنی ایمانداری اور محنت کی وجہ سے ایک فٹ پاتھ سے شروع کردہ کاروبار سے آج وہ 2 ملگیوں میں کاروبار کرتے ہوئے علاقے کے کامیاب ترین تاجروں میں شامل ہوچکے ہیں ۔ محمد عبدالرحیم جلیبی اور اڈلی دوسہ کا کاروبار ضرور کرتے ہیں لیکن محلے والے انہیں جلیبی والے رحیم بھائی کے نام سے ہی مخاطب کرتے ہیں جنہوں نے سخت محنت ایمانداری ، فرمانبردار بیوی اور اولاد کے تعاون کے ساتھ خود کو ایک ایسا کامیاب تاجر بنالیا ہے جو کہ دوسروں کے لیے ایک مثال ہے جن سے آج آپ نے ملاقات کی ۔ کل پھر ایک عام آدمی کی خاص بات سے یہیں ملاقات کرتے ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT