Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں / عبداللہ یافعی کو بندوق فروخت کرنے والے سے جرح

عبداللہ یافعی کو بندوق فروخت کرنے والے سے جرح

حیدرآباد ۔ /11 اگست (سیاست نیوز) اکبر الدین اویسی حملہ کیس کی سماعت کا سلسلہ روزانہ کی اساس پر جاری ہے ۔ آج سماعت کے دوران حملہ کیس کے ملزم عبداللہ بن یونس یافعی کو بندوق فروخت کرنے والے آرمری کے پروپرائیٹر نے عدالت میں اپنا بیان قلمبند کروایا ۔ جس پر اسپیشل پبلک پراسیکیوٹر مسٹر اوما مہیشور راؤ نے جرح کیا ۔ اسٹیشن روڈ عابڈس پر واقع آرمری کی دوکان کے پروپرائیٹر جو اس کیس کے گواہ نمبر 25 ہے نے عدالت میں دیئے گئے اپنے بیان میں بتایا کہ اس نے عبداللہ یافعی کو بندوق فروخت کی تھی ۔ پبلک پراسیکیوٹر نے جرح کے دوران گواہ سے یہ سوال کیا کہ کیا اسلحہ فروخت کرنے کا ریکارڈ رکھا جاتا ہے ۔ گواہ نے جواب دیا کہ ان کے آرمری سے فروخت ہونے والے تمام اسلحہ ریوالورس اور دیگر بندوق وغیرہ کا تفصیلی ریکارڈ موجود ہے ۔ پبلک پراسیکیوٹر نے سوال کیا کہ کیا اسلحہ خریدنے والے افراد کی دستخط حاصل کی جاتی ہے اور کیا یہ ریکارڈ وقتاً فوقتاً پولیس کو پیش کیا جاتا ہے ؟ گواہ غلام عبدالقادر نے بتایا کہ اسلحہ خریدنے والے افراد کی رجسٹر میں دستخط لی جاتی ہے اور تمام ریکارڈس کو مقررہ مدت کے بعد پولیس میں پیش کیا جاتا ہے ۔ عبداللہ یافعی کے آرمس لائسنس سے متعلق سوال کئے جانے پر گواہ نے بتایا کہ ان کے گاہک نے سال 2011 ء میں آرمس لائسنس تجدید کروائی تھی اور یہ لائسنس /16 ڈسمبر سال 2013 ء تک کارکرد تھا ۔ مزید بیان میں یہ بتایا گیا کہ انہوں نے مذکورہ ریکارڈ اور دیگر تفصیلات حملہ کیس کی تحقیقات کررہی پولیس ٹیم کو واقف کروایا تھا اور اس سلسلے میں اپنا بیان بھی قلمبند کیا تھا ۔ گواہ نے عدالت میں عبداللہ بن یونس یافعی کی نشاندہی کرتے ہوئے اسلحہ خریدے جانے کی تصدیق کی ۔

TOPPOPULARRECENT