Wednesday , November 22 2017
Home / شہر کی خبریں / عثمانیہ یونیورسٹی میں 30 جون کو بیف فیسٹول کے انعقاد کی تیاریاں

عثمانیہ یونیورسٹی میں 30 جون کو بیف فیسٹول کے انعقاد کی تیاریاں

بائیں بازو کی اور دلت طلبا تنظیموں کی تائید۔ زعفرانی بریگیڈ ’ پورک فیسٹول ‘ منعقد کرنے کیلئے کوشاں
حیدرآباد۔یکم ۔جون (سیاست نیوز) مرکزی حکومت کے بڑے جانور کے متعلق اعلامیہ کے خلاف جامعہ عثمانیہ میں 30جون کو بیف فیسٹیول منعقد کرنے کی تیاریاں کی جارہی ہیں اور ان تیاریوںکو بائیں بازو کی اور دلت طلبا کی تنظیموں کی تائید حاصل ہے۔ جامعہ عثمانیہ میں منعقد ہونے جا رہے اس بیف فیسٹیول کے خلاف بطور احتجاج زعفرانی بریگیڈ کی جانب سے’پورک فیسٹیول‘ کا انعقاد عمل میں لانے کی تیاریاں کی جا رہی ہیں۔ جامعہ عثمانیہ میں بیف فیسٹیول کا انعقاد کوئی نئی بات نہیں ہے لیکن 2015میں منعقد ہونے والے بیف فیسٹیول کے دوران یونیورسٹی کے احاطہ میں صورتحال کشیدہ ہوگئی تھی اور زعفرانی بریگیڈ کی جانب سے بیف فیسٹیول منعقد کرنے والوں کے خلاف پرتشدد مظاہرہ کیا گیا تھا۔ 2015میں طلبہ نے عالمی یوم انسانی حقوق کے موقع پر بیف فیسٹیول کا انعقاد عمل میں لایا گیا تھا۔ باوثوق ذرائع کے مطابق جامعہ عثمانیہ کیمپس میں 30جون کو بیف فیسٹیول کے انعقاد کے سلسلہ میں طلبہ تنظیموں کے سرکردہ قائدین کی مشاورت کا سلسلہ جاری ہے اور ان تنظیموں کے ذمہ دارو ںکا کہنا ہے کہ مرکزی حکومت ہندستانی شہریوں کے غذائی عادات واطوار پر پابندی عائد کرنے کے اقدامات نہیں کر سکتی کیونکہ اس طرح کے اعلامیہ حقوق انسانی پر ضرب کے مترادف ہیں اور حکومت کا اعلامیہ شہریوں کی غذائی آزادی پر حملہ ہے۔ اس متنازعہ اعلامیہ کے خلاف احتجاج میں جامعہ عثمانیہ کے طلبہ کی شمولیت کی صورت میں شہر میں بھی اس کے اثرات نظر آنے لگیں گے۔ یونیورسٹی انتظامیہ کا کہنا تاحال کوئی بھی گروپ اس مسئلہ پر اجاز ت کیلئے انتظامیہ سے رجوع نہیں ہوا ہے لیکن اس بات کی اطلاع ضرور موصول ہو رہی ہے کہ بیف فیسٹیول اور پورک فیسٹیول کے انعقاد کی تیاریاں جاری ہیں اور ان تیاریوں کے سلسلہ میں طلبہ تنظیموں کے اجلاس بھی ہو رہے ہیں ۔ یونیورسٹی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ بیف فیسٹیول و پورک فیسٹیول کے انعقاد کی اجازت کیلئے درخواست موصول ہونے کے بعد قطعی فیصلہ کیا جائے گا۔طلبہ تنظیموں کے ذمہ داروں کا کہنا ہے کہ وہ اس فیسٹیول کے انعقاد کیلئے اجازت حاصل کرنے کے متعلق غور نہیں کررہے ہیں لیکن ان کا احساس ہے کہ وہ اس سلسلہ میں یونیورسٹی انتظامیہ کو اس سلسلہ میں قبل از مطلع ضرور کردیں گے تاکہ نظم و ضبط کی برقراری کا کوئی مسئلہ پیدا نہ ہونے پائے۔ زعفرانی بریگیڈ کے متعلق بائیں بازو جماعتوں کی طلبا تنظیموں کا کہنا ہے کہ زعفرانی بریگیڈ یونیورسٹی کے باہر سے تعلق رکھنے والی تنظیموں کو اکساتے ہوئے بیف فیسٹیول کے خلاف پورک فیسٹیول کے انعقاد کی کوشش کر رہی ہیں جبکہ بیف فیسٹیول میں ابتدا سے یونیورسٹی سے تعلق رکھنے والے ہی شرکت کرتے آئے ہیں ۔ دونوں گروہوں کی سرگرمیوں پر محکمہ پولیس کے خفیہ گوشوں کی جانب سے بھی خصوصی نظر رکھی جا رہی ہیں تاکہ یونیورسٹی میں امن و ضبط کی برقراری کو ممکن بنایا جاسکے۔

TOPPOPULARRECENT